உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    GZRRC ZOO:سپریم کورٹ نے GZRRC چڑیا گھر کے خلاف دائرعرضداشت کو کیا خارج

    Youtube Video

    Greens Zoological Rescue and Rehabilitation Centre Society (GZRRC):جی زیڈ آر آر سی کی طرف سے داخل کردہ جواب کا جائزہ لیتے ہوئے، عدالت نے کہا کہ وہ مطمئن ہے کہ جی زیڈ آر آر سی کو آپریشن اور اس میں جانوروں کی منتقلی اور اس کے نتیجے میں ہونے والی سرگرمیوں کے لئے دی گئی اجازت قانونی طورپر جائز ہیں۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Gujarat | Jamnagar | Gandhinagar | Delhi
    • Share this:
      سپریم کورٹ نے گجرات کے جام نگر میں گرینز زولوجیکل ریسکیو اینڈ ری ہیبلیٹیشن سینٹر سوسائٹی (جی زیڈ آر آر سی) Greens Zoological Rescue and Rehabilitation Centre Society (GZRRC) کے ذریعہ قائم کیے جانے والے چڑیا گھر کے خلاف دائر مفاد عامہ کی عرضی کو خارج کردیاہے جسے ریلائنس انڈسٹریز لمیٹڈ (Reliance Industries Limited) کی حمایت حاصل ہے۔سپریم کورٹ نے مشاہدہ کیا کہ جی زیڈ آر آر سی (GZRRC) کے خلاف لگائے گئے الزامات میں منطق یا بنیاد کی کمی ہے اور یہ صرف نیوز رپورٹس پر مبنی ہیں۔

      سپریم کورٹ نے یہ بھی نوٹ کیاکہ GZRRC کو حکام کی جانب سے  اجازت اور منظوری دینے کے دوران کوئی بھی لاپرواہی کا مظاہرہ نہیں کیاگیاہے۔

      جی زیڈ آر آر سی کی طرف سے داخل کردہ جواب کا جائزہ لیتے ہوئے، عدالت نے کہا کہ وہ مطمئن ہے کہ جی زیڈ آر آر سی کو آپریشن اور اس میں جانوروں کی منتقلی اور اس کے نتیجے میں ہونے والی سرگرمیوں کے لئے دی گئی اجازت قانونی طورپر جائز ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں: دودھ کی قیمتوں میں اضافہ، 17 اگست سے 2 روپئے لیٹر مہنگا ہوگا Amul اور Mother Dairy کا دودھ

      عدالت نے GZRRC کے بنیادی ڈھانچے، کام کاج، ڈاکٹروں، کیوریٹروں (curators)، حیاتیات کے ماہرین (biologists)، حیوانیات (zoologists) اور اس میں مصروف دیگر ماہرین کے بارے میں گذارشات کو بھی نوٹس میں لیا اور کہا کہ یہ تنظیم قانون کے لحاظ سے اپنی سرگرمیوں کو انجام دے رہی ہے۔

      جی زیڈ آر آر سی نے عدالت کے سامنے واضح کیا کہ وہ ایک زولوجیکل پارک (Zoological Park) قائم کرے گے، جو بنیادی طور پر تعلیمی مقاصد اور عوامی نمائش کے لیے کھلا رہے گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس کی باقی سہولیات نہ صرف ہندوستان سے بلکہ دنیا بھر میں جانوروں کی فلاح و بہبود، بچاؤ اور بحالی اور تحفظ کے مقصد کے ساتھ  کام کرئے گی ۔

      عدالت عظمیٰ نے یہ بھی نوٹ کیا کہ جی زیڈ آر آر سی ایک غیر منافع بخش تنظیم ہے جس کا بنیادی مقصد جانوروں کی فلاح و بہبود ہے اور اگر اس سے کوئی آمدنی حاصل ہوتی ہے تو جی زیڈ آر آر سی (GZRRC) اس کو صرف جانوروں کے تحفظ اور بچاؤ کے کاموں کے لیے استعمال کرے گی۔

      درخواست گزار ماہر نہیں ہے

      اپنے حکم میں سپریم کوٹ نے مشاہدہ کیا کہ  پی آئی ایل (PIL) دائر کرنے والا کارکن اس فیلڈ کا ماہر نہیں ہے اور اس نے پٹیشن کو محض خبروں کی بنیاد پر درج کیا ہے اور وہ رپورٹز بھی کسی ماہر نے نہیں بنائے ہے۔

      عدالت نے یہ بھی نوٹ کیا کہ اس بات پر اختلاف کرنے کی شاید ہی کوئی گنجائش ہے کہ GZRRC ایک تسلیم شدہ چڑیا گھر کے ساتھ ساتھ ایک تسلیم شدہ ریسکیو سینٹر بھی ہے۔

      اس نے مشاہدہ کیا کہ جواب دہندہ نمبر 2 کی جانب سے مہارت کی کمی یا تجارتی کاری کے حوالے سے درخواست گزار کے الزامات غیر یقینی ہیں اور ایسا نہیں لگتا کہ درخواست گزار نے PIL کے دائرہ اختیار میں اس عدالت کو منتقل کرنے سے پہلے مطلوبہ تحقیق کی ہے۔

      گرینز زولوجیکل ریسکیو اینڈ ری ہیبلیٹیشن سینٹر سوسائٹی (Greens Zoological Rescue and Rehabilitation Centre Society)

      جی زیڈ آر آر سی نے اپنی سالانہ رپورٹ 2020-21 میں کہا کہ ان کا مقصد حیاتیاتی تنوع کی اہمیت کے بارے میں لوگوں میں بیداری پیدا کرنا اور جانوروں کے بچاؤ اور بحالی کے لیے ایک نوڈل مرکز بننا ہے، جنہیں فوری دیکھ بھال کی ضرورت ہے۔ اس تنظیم کا مقصد ایک تحفظ افزائش مرکز بننا ہے جو اس خطے میں خطرے سے دوچار ہندوستانی نسلوں کے جانوروں کو واپس لانے کے لیے کام کر رہا ہے جو معدومیت کے دہانے پر ہیں۔

      رپورٹ میں مزید کہا گیا کہ جی زیڈ آر آر سی میں سیٹلائٹ ریسکیو سہولت ہاؤسنگ چیتے (Housing Leopards) اور قرنطینہ کےلیے جگہ (quarantine area) کو فعال کر دیا گیا ہے اور باقی سہولیات کی منصوبہ بندی اور تعمیر کی جا رہی ہے۔
      Published by:Faheem Mir
      First published: