ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

دیپکا پادوکون کی حمایت میں شیو سینا، سنجے راؤت نےکہا- ملک میں نہیں چلے گی'طالبانی ذہنیت'۔

شیو سینا (Shiv Sena) لیڈر اور راجیہ سبھا رکن پارلیمنٹ سنجے راؤت (Sanjay Raut) نےکہا ہےکہ ملک میں اس طرح سے'طالبانی' ذہنیت نہیں چل سکتی ہے۔

  • Share this:
دیپکا پادوکون کی حمایت میں شیو سینا، سنجے راؤت نےکہا- ملک میں نہیں چلے گی'طالبانی ذہنیت'۔
دیپکا پادوکون کی حمایت میں آئےشیو سینا لیڈر سنجے راؤت۔ فائل فوٹو

ممبئی: جے این یو کیمپس میں جانےکے بعد کچھ لوگوں کی تنقید کا شکار ہوئی بالی ووڈ اداکارہ دیپکا پادوکون کی جہاں کچھ سیاسی پارٹیاں مخالفت کررہی ہیں، تو بڑی تعداد میں لوگ ان کی حمایت بھی کر رہے ہیں۔ اسی ضمن میں اب شیو سینا بھی دیپکا پادوکون کی حمایت میں کھل کر اترآئی ہے۔ پارٹی رکن پارلیمنٹ اور سینئر لیڈر سنجے راؤت نے اتوار کو اداکارہ دیپکا پادوکون کی حمایت کی ہے۔


ملک میں نہیں چل سکتی ہے طالبانی ذہنیت


شیو سینا لیڈر اور راجیہ سبھا رکن پارلیمنٹ سنجے راؤت نےکہا ہے کہ ملک میں اس طرح سے 'طالبانی' ذہنیت نہیں چل سکتی ہے۔ شیو سینا کے اخبار 'سامنا' کے کارگزار ایڈیٹر سنجے راؤت کا کہنا ہے کہ اس طرح سے دیپلا پادوکون یا ان کی فلم کا بائیکاٹ کرنا غلط ہے۔


کیا ہے پورا معاملہ؟

واضح رہےکہ گزشتہ منگل کو دیپکا پادوکون جے این یو میں ہونے والے تشدد کے خلاف طلباء کو حمایت دینے پہنچی تھیں۔ اس دوران وہ زخمی جے این یو طلبہ یونین کی صدر آئیشی گھوش سے ملیں اور احتجاجی مظاہرہ کررہے طلباء کے ساتھ کھڑی نظرآئیں۔ حالانکہ، دیپکا پادوکون نے جے این یو میں کسی طرح کا کوئی بیان نہیں دیا تھا، لیکن اس کے بعد بی جے پی اور اس کے حامیوں کی جانب سےکئی لوگوں نے انہیں 'لیفٹ کی حمایت کرنے والی' قرار دے دیا تو کچھ کا کہنا تھا کہ وہ 'چھپاک' کی تشہیر کرنےگئی تھیں۔ دیپکا پادوکون کی مخالفت کرنے والوں کی جانب سے ان کی فلم 'چھپاک' کے بائیکاٹ کا بھی مطالبہ کیا جانے لگا۔

جےاین یوپہنچیں دیپکا پادوکون، جےاین یو ایس یو صدرآئیشی گھوش سےکی ملاقات۔

کئی جگہ ٹیکس فری ہوئی فلم

فلم 'چھپاک' میں دیپکا پادوکون ایک تیزاب متاثرہ کا کردار ادا کررہی ہیں۔ اس فلم کی ہدایت کاری میگھنا گلزار نے کیا ہے۔ یہ فلم 10 فروری کو ریلیز ہوئی ہے اورکانگریس کے زیر اقتدار ریاستوں مدھیہ پردیش اور چھتیس گڑھ میں اسے ٹیکس فری کیا گیا ہے۔

 
First published: Jan 12, 2020 04:31 PM IST