ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

شیوسینا کا ’’آج کے شیواجی، نریندرمودی‘‘ کتاب کے خلاف احتجاجی مظاہرہ

ذرائع کے مطابق احتجاجی مظاہرے میں خواتین بھی شامل تھیں۔کتاب کے مصنف جے بھگوان گوئل نے چھترپتی شیواجی سے وزیراعظم مودی کا موازنہ کیا ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Jan 13, 2020 07:54 PM IST
  • Share this:
شیوسینا کا ’’آج کے شیواجی، نریندرمودی‘‘ کتاب کے خلاف احتجاجی مظاہرہ
وزیر اعظم نریندر مودی: فائل فوٹو

کولہا پور۔ بھارتیہ جنتا پارٹی کے لیڈر جے بھگوان گوئل کی وزیراعظم نریندر مودی کےسلسلے میں لکھی گئی کتاب’’آج کے شیواجی،نریندرمودی‘‘ کے عنوان سے شائع ہوئی ہے جس پر تنازعہ پیدا ہوگیا ہے اور شیوسینا نے اس پر اعتراض ظاہر کرتے ہوئے احتجاجی مظاہرہ کیا۔ ذرائع کے مطابق احتجاجی مظاہرے میں خواتین بھی شامل تھیں۔کتاب کے مصنف جے بھگوان گوئل نے چھترپتی شیواجی سے وزیراعظم مودی کا موازنہ کیا ہے۔


گوئل کے خلاف نعرے بازی کرتے ہوئے احتجاجی مظاہرہ کرنے والوں نے ان کے پوسٹر کو چپل سے پیٹا اور کتاب پر پابندی لگانے کا مطالبہ کیا۔ اس کتاب کا اجرا اتوار کو دہلی میں واقع بی جے پی کے ہیڈکوارٹر میں ہوا تھا۔کولہاپور شہر کے شیوسینا کے صدر روی کرن انگاولے نے کہا کہ شیو سینا شیواجی مہاراج کی توہین برداشت نہیں کرےگی۔ انہوں نے کہا کہ گوئل کو عوامی طورپر معافی مانگنی چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی کے ہیڈکوارٹر میں کتاب کا اجرا ہونے کی وجہ سے پارٹی کے قومی صدر کو بھی شیواجی کو چاہنے والوں سے معافی مانگنی چاہئے۔


تحریک کے دوران حاضر رہنے والے اہم شیو سینک میں شیرساگر،پارٹی کے یوتھ لیڈر منگل سلوکھے،کولہاپور خاتون مورچہ کی صدر پوجا کامٹے،مہیش اتم ،جینت ہروگلے،دیپک چوہان،دھنجی دلوی،اشونی شیلکے،دادو شندے،سنیل کھوت،گوری مکڑ،میناتائی پاٹے دار اور منگل کلکرنی شامل تھے۔ اورنگ آباد ضلع میں بھی اسی طرح کا احتجاجی مظاہرہ مراٹھا کرانتی مورچہ نے بھی کیا۔ احتجاجی مظاہرہ کرنے والوں نے مصنف کےخلاف پولیس میں شکایت درج کرنے کا مطالبہ کیا۔

First published: Jan 13, 2020 07:54 PM IST