உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ناندیڑ میں شیوسینکوں نے ہڈیاں لے جارہے ٹرک کو کروایا ضبط

    ناندیڑ : مہاراشٹر میں جب سے گئو ونش ہتیہ بندی قانون نافذ ہوا ہے، گائے کی نسل کے جانوروں کی نقل و حمل تو دور کی بات ہے

    ناندیڑ : مہاراشٹر میں جب سے گئو ونش ہتیہ بندی قانون نافذ ہوا ہے، گائے کی نسل کے جانوروں کی نقل و حمل تو دور کی بات ہے

    ناندیڑ : مہاراشٹر میں جب سے گئو ونش ہتیہ بندی قانون نافذ ہوا ہے، گائے کی نسل کے جانوروں کی نقل و حمل تو دور کی بات ہے

    • ETV
    • Last Updated :
    • Share this:
      ناندیڑ : مہاراشٹر میں جب سے گئو ونش ہتیہ بندی قانون نافذ ہوا ہے، گائے کی نسل کے جانوروں کی نقل و حمل تو دور کی بات ہے، ان کی ہڈیوں تک کو ایک جگہ سے دوسری جگہ لے جانے کی مخالفت شروع ہوگئی ہے ۔ ایسا ہی ایک سنسنی خیز معاملہ ناندیڑ میں سامنے آیا ہے ۔ بتایا جاتا ہے کہ شیوسینکوں نے گذشتہ شب تقریبا دیڑھ بجے ایک ایسے ٹرک کو ہائی وے پر روک لیا، جس میں جانوروں کی ہڈیاں لے جائی جارہی تھی ۔
      ٹرک میں رکھی اشیاء سے آرہی بد بو سے شیوسینکوں کو لگا کہ اس میں گائے نسل کے جانورکا گوشت لے جایا جارہا ہے، لیکن گوشت کی بجائے ہڈیاں نظر آنے پربھی چین نہیں آیا اورانہوں نے پولیس میں اس کی شکایت کردی ۔ شیوسینکوں کی شکایت پر ناندیڑکے وزیرآباد پولیس اسٹیشن میں ٹرک ڈرائیور مکیش رام پت کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا۔ اب معاملے کی چھان بین کی جارہی ہے ۔
      شیوسینا کارکنان کا الزام ہے کہ ضبط ٹرک میں گائےاوربیل کی ہڈیاں لے جائی جارہی تھیں اور انہوں نے یہ کارروائی ریاست میں نافذ گئو ونش ہتیہ بندی قانون کے تحت کی ہے ۔ ٹرک ڈرائیور کا کہنا ہے کہ ٹرک میں پائی جانے والی ہڈیاں بھینس کی ہیں اور وہ اسے کرنا ٹک سے اتر پردیش کے بجنورشہر کے ہڈی کارخانے میں لے جارہا تھا ۔تفتیش میں یہ بات سامنے آئی کہ ٹرک کا مالک مہیش لوٹو ہے ۔
      ادھر ماہرین کا مانناہے کہ اصولی طورپر دیکھا جائے تو اس طرح کی کارروائی ہی مناسب نہیں ہے ، کیونکہ جس ریاست کرناٹک سے یہ ہڈیاں لے جائی جارہی تھیں ، اس میں گئو ونش کے ذبیحہ پرکوئی پابندی نہیں ہے ۔ کھلے عام وہاں بیل کا ذبیحہ ہوتا ہے اور جہاں یہ ہڈیاں بھیجی کی جارہی ہیں، ا س ریاست میں بھی ذبیحہ مخالف قانون نافذ نہیں ہے ۔ ایسے میں ہڈیوں کی نقل و حرکت کا یہ عمل غیر قانونی کیسے بتایا جارہا ہے ۔
      First published: