ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

مودی حکومت کو سماجی رہنما انا ہزارے کی دھمکی "30 جنوری تک لوکپال کی تقرری نہ ہونے پردھرنے پربیٹھوں گا"۔

انا ہزارے نے کہا کہ مودی حکومت نے پہلے کہا کہ لوک سبھا میں اپوزیشن میں کوئی سینئرلیڈر نہ ہونے کی وجہ سے لوکپال مقررنہیں کیا جاسکتا اوربعد میں کہا کہ سلیکشن کمیٹی میں کوئی معززانصاف پسند نہیں ہے۔

  • Share this:
مودی حکومت کو سماجی رہنما انا ہزارے کی دھمکی
سماجی رہنما انا ہزارے نے مودی حکومت کو دی بھوک ہڑتال کی دھمکی۔

سماجی رہنما انا ہزارے نے ہفتہ کو کہا کہ بدعنوانی مخالف لوکپال کی تقرری نہ ہونے پروہ اپنے گاوں میں 30 جنوری سے بھوک ہڑتال کریں گے۔ انہوں نے وزیراعظم دفترمیں وزیرممکت جتیندرسنگھ کولکھے خط میں این ڈی اے حکومت پرمرکزمیں لوکپال اورریاست میں لوک آیکت کی تقرری نہ کرنے کے لئے بہانے بنانے کا الزام لگایا۔


انا ہزارے نے کہا کہ نریندرمودی حکومت نے پہلے کہا کہ لوک سبھا میں اپوزیشن میں کوئی سینئرلیڈرنہ ہونے کی وجہ سے لوکپال مقررنہیں کیا جاسکتا (جوتقرری عمل کا حصہ ہے) اوربعد میں کہا کہ سلیکشن کمیٹی میں کوئی معزز انصاف پسند نہیں ہے۔


انہوں نے کہا کہ وہ اس سال 23 مارچ کورام لیلا میدان میں بھوک ہڑتال پربیٹھے تھے، لیکن پی ایم اوکی تحریری یقین دہانی کے بعد انہوں نے ہڑتال ختم کردی تھی۔ انا ہزارے نے کہا کہ انہوں نے پھردواکتوبرتک کا وقت دیا۔


انہوں نے لکھا "دواکتوبرکواپنے گاوں رالیگن سدھی سے تحریک شروع کرنی تھی، لیکن مہاراشٹرکے وزیراعلیٰ اوردیگرلیڈروں نے پھریقین دہانی کرائی کہ لوکپال اورلوک آیکت کی تقرری کا عمل آخری مرحلے میں ہے۔ میں نے انہیں ایک اورموقع دینے اور30 جنوری تک انتظارکرنے کا من بنایا ہے"۔ اناہزارے نے الزام لگایا کہ یہ واضح طورپرموجودہ حکومت کی منشا لوکپال اورلوک آیکت کی تقرری کرنے کی نہیں ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  سشما سوراج نے کہا "کرتارپورکے نام پرپاکستان نے دیا دھوکہ"، عمران خان سے اپنا موقف واضح کرنے کا مطالبہ

یہ بھی پڑھیں:  جی -20 اجلاس میں ہندوستان کو ملا 'تحفہ'، مودی حکومت کی بڑی ڈپلومیٹک جیت
First published: Dec 02, 2018 10:49 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading