ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

ہندوستان کی شرمناک شکست ، جنوبی افریقہ کا سیریزپر قبضہ

ممبئی۔ ممبئی کے وانکھیڑے اسٹیڈیم میں کھیلے گئے جنوبی افریقہ سیریز کے پانچویں اور آخری میچ میں ہندستان کو شرمناک شکست کا سامنا کرنا پڑا۔

  • UNI
  • Last Updated: Oct 25, 2015 10:51 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
ہندوستان کی شرمناک شکست ، جنوبی افریقہ کا سیریزپر قبضہ
ممبئی۔ ممبئی کے وانکھیڑے اسٹیڈیم میں کھیلے گئے جنوبی افریقہ سیریز کے پانچویں اور آخری میچ میں ہندستان کو شرمناک شکست کا سامنا کرنا پڑا۔


ممبئی۔  ممبئی کے وانکھیڑے اسٹیڈیم میں کھیلے گئے جنوبی افریقہ سیریز کے پانچویں اور آخری میچ میں ہندستان کو شرمناک شکست کا سامنا کرنا پڑا۔ جنوبی افریقہ کی جانب سے بنائے گئے پہاڑ جیسے بڑے اسکور کا پیچھا کرتے ہوئے ٹیم انڈیا سستے میں ہی آؤٹ ہو گئی۔ ہندستان نے 214 رنز سے شکست کا سامنا کرتے ہوئے سیریز بھی اپنے ہاتھ سے گنوا دی۔ ہندستان  کے میچ ہارنے کے ایک ہی نہیں کئی وجوہات رہییں۔


سلامی بلے باز كوئنٹن ڈی کاک( 109 )،فاف ڈو پلیسس (133 ریٹائرڈ ہرٹ) اور کپتان اے بی ڈی ویلیئرس (119) کی شاندار سنچریوں کی بدولت جنوبی افریقہ نے ہندوستان کو دو طرفہ سیزیز کے پانچویں اور آخری ون ڈے میچ میں اتوار کو 214 رن کے بڑے فرق سے شکست دے کر پانچ میچوں کی سیریز 2۔3 سے جیت لی۔ جنوبی افریقہ نے مقررہ 50 اووروں میں چار وکٹوں کے نقصان پر 438 رن کا ہمالیائی اسکور بنا کر ہندوستانی چیلنج کا پہلے ہی دم خم نکال دیا تھا اور رہی سہی کسر ہندوستانی بلے بازوں نے پوری کر دی۔ ٹیم انڈیا 35.5 اووروں میں ہی 224 رن پر آل آوٹ ہو کر 214 رنوں سے شرمناک شکست کو گلے لگا بیٹھی۔ کپتان مہندر سنگھ دھونی اس طرح ٹوئنٹی -20 سیریز 0۔2سے گنوانے کے بعد ون ڈے سیریز3۔2سے گنوا بیٹھے۔


ہندوستان کی جانب سے صرف دو بلے باز ہی جنوبی افریقہ کے گیند بازوں کے سامنے ٹک سکے۔ اجنکیا رہانے نے تیز انداز میں بلے بازی کرتے ہوئے 58 گیندوں پر نو چوکوں اور تین چھکوں کی مدد سے 87 رن کی زبردست اننگز کھیلی جبکہ سلامی بلے باز شکھر دھون نے سیریز کے آخری میچ میں اپنی فارم میں واپسی کرتے ہوئے 60 رن بنائے۔ دھون نے 59 گیندوں پر 60 رن کی اپنی اننگز میں آٹھ چوکے لگائے۔


رہانے اور دھون نے تیسرے وکٹ کے لئے 112 رن کی ساجھیداری ادا کی۔ اس شراکت داری کے وقت لگ رہا تھا کہ ٹیم انڈیا جنوبی افریقہ کے سامنے اپنا چیلنج پیش کر سکے گی لیکن جیسے ہی یہ رفاقت ٹوٹی، ہندوساتی اننگز کو سمٹنے میں زیادہ وقت نہیں لگا۔

سلامی بلے باز روہت شرما (16) اور گزشتہ میچ میں سنچری بنانے والے وراٹ کوہلی (7) نے خراب شاٹ کھیل کر اپنے وکٹ گنوائے جبکہ سریش رینا 12، کپتان مہندر سنگھ دھونی 27، اکشر پٹیل پانچ، ہربھجن سنگھ صفر، بھونیشور کمار ایک اور امت مشرا چار رن بنا کر آؤٹ ہوئے۔ ہندوستان نے آخری سات وکٹ محض 52 رن جوڑ کر گنوا دیے اور پوری ٹیم 35.5 اوور میں سمٹ گئی۔ جنوبی افریقہ نے اس طرح ہندوستان کے خلاف اپنی سب سے بڑی کامیابی حاصل کر لی۔


جنوبی افریقہ کی اننگز میں محض 87 گیندوں میں 17 چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 109 رن بنانے والے سلامی بلے باز كوئنٹن ڈی کاک کو 'مین آف دی میچ' کا ایوارڈ ملا جبکہ سیریز میں تین سنچریوں کی مدد سے 358 رن بنانے والے جنوبی افریقہ کے کپتان اے بی ڈی ویلیئرس کو 'مین آف دی سیریز' کا ایوارڈ دیا گیا۔
جنوبی افریقہ کے تین بلے بازوں ڈی کاک 109، فاف ڈو پلیسس (133 ریٹائرڈ ہرٹ) اور ڈی ویلیئرس (119) نے سنچری بنائی اور اس کے بعد تیزگیندبازكیگسو ربادا نے 41 رن پر چار وکٹ اور ڈیل اسٹین نے 38 رن پر تین وکٹ لے کر ہندوستانی بلے بازی کا دم نکال دیا۔

جنوبی افریقہ نے اس طرح پہلی بار ہندوستان میں ون ڈے سیریز جیت لی۔


ممبئی کے وانکھیڑے اسٹیڈیم میں کھیلے گئے اس میچ میں کاک نے 87 گیندوں میں 17 چوکے اور ایک چھکا لگایا۔ڈو پلیسس نے 115 گیندوں کی اپنی اننگز میں نو چوکے اور چھ چھکے لگائے جبکہ ڈی ویلیئرز نے طوفانی انداز میں کھیلتے ہوئے تین چوکے اور 11 چھکے لگائے۔اس میدان پر کسی بھی ٹیم کی طرف سے بنایا گیا یہ سب سے زیادہ اسکور ہے۔
ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کرنے اتری جنوبی افریقہ کو پہلا جھٹکا ہاشم آملہ کے طور پر چوتھے اوور کی آخری گیند پر لگا جب موہت شرما نے وکٹ کیپر مہندر سنگھ دھونی کے ہاتھوں انہیں کیچ کرا کر پویلین بھیج دیا۔آملہ نے 13 گیندوں پر پانچ چوکوں کی مدد سے 23 رنز بنائے۔اس کے بعد كوئنٹن ڈی کاک اور ڈو پلیسس کے درمیان دوسرے وکٹ کے لئے 154 رن کی شراکت ہوئی۔ڈی کاک کو سریش رینا نے وراٹ کوہلی کے ہاتھوں کیچ کراکر آؤٹ کیا۔


ڈو پلیسس نے کپتان ڈی ویلیئرز کے ساتھ مل کر اننگز کھیلنے ہوئے تیسرے وکٹ کے لئے 164 رن کی زبردست شراکت کی۔اس دوران دونوں ہی بلے بازوں نے ہندستانی گیند بازوں کی جم کر دھنائی کرتے ہوئے میدان کے ہر طرف شاٹ لگائے۔


ٹوئنٹی -20 کپتان ڈو پلیسس کو میچ کے دوران اچانک پاؤں میں تکلیف ہونے لگی جس کے بعد 133 کے اسکور پر وہ ریٹائرڈ ہرٹ ہو گئے۔ڈيولیرس نے ڈیوڈ ملر کے ساتھ 47 رنز کی شراکت کی اور وہ 47 ویں اوور کی آخری گیند پر بھونیشور کمار کا شکار بنے۔بھونیشور نے انہیں دھونی کے ہاتھوں کیچ کراکر پویلين کی راہ دکھائی۔ جنوبی افریقہ نے اپنی اس کارکردگی کے بعد ون ڈے میں اپنا تیسرا اور دنیا میں چوتھا سب سے بہترین اسکور بنا لیا ہے۔اس سے پہلے اس نے اسی سال جنوری میں ویسٹ انڈیز کے خلاف دو وکٹ پر 439 رنز اور سال 2006 میں آسٹریلیا کے خلاف نو وکٹ پر 438 رن بنائے تھے۔ سری لنکا نے 2006 میں ہالینڈ کے خلاف نو وکٹوں کے نقصان 443 رنز بنائے تھے جو کسی بھی ٹیم کی طرف سے ون ڈے میں بنایا بہترین اسکور ہے۔


ڈیولیرس جب آؤٹ ہوئے اس وقت ٹیم کا اسکور 398 رنز تھا اور میچ میں تین اوور باقی تھے۔ ایسا لگ رہا تھا کہ ہندوستانی بولر اس میچ میں جنوبی افریقہ کے بلے بازوں کے سامنے ہاتھ کھڑے کر چکے ہیں اور مہمان ٹیم کے بلے باز مسلسل میدان کے ہر کونے میں شاٹ لگا رہے تھے۔ ڈیوڈ ملر نے 12 گیندوں میں تین چوکوں کی مدد سے ناٹ آؤٹ 22 رن جبکہ فرحان بہار الدین نے 10 گیندوں میں دو چھکے اڑا کر 16 رن بنائے۔ بہار الدین آخری اوور میں ہربھجن سنگھ کا شکار بنے۔ٹیم میں شامل نئے بلے باز ڈین ایلگر نے دو گیندوں میں ایک چوکا لگا کر ناٹ آؤٹ 5رنز بنائے۔


ہندوستانی گیند بازوں کی آج جم کر دھنائی ہوئی۔تیز گیند باز بھونیشور نے 10 اوور میں 106 رن دے کر ایک وکٹ، موہت شرما نے سات اوور میں 84 رن دے کر ایک وکٹ، اسپنر ہربھجن نے 10 اوور میں 70 رن دے کر ایک وکٹ اور سریش رینا نے تین اوور میں 19 رن دے کر ایک وکٹ لیا۔

First published: Oct 25, 2015 07:03 PM IST