ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

نرودا پاٹیا فساد: سپریم کورٹ نے 97 لوگوں کے قتل کے 4 قصورواروں کو دی ضمانت

احمد آباد کے نرودا پاٹیا علاقے میں 28 فروری 2002 کو مشتعل ہجوم نے اقلیتی کمیونٹی کے قریب 97 لوگوں کا قتل کر دیا تھا۔

  • Share this:
نرودا پاٹیا فساد: سپریم کورٹ نے 97 لوگوں کے قتل کے 4 قصورواروں کو دی ضمانت
سپریم کورٹ

سپریم کورٹ نے 2002 نرودا پاٹیا فساد معاملے میں چار قصورواروں کو ضمانت پر چھوڑنے کا حکم دیا ہے۔ یہ معاملہ گجرات فسادات سے جڑا ہے جہاں احمد آباد کے نرودا پاٹیا علاقے میں 28 فروری 2002 کو مشتعل بھیڑ نے اقلیتی برادری کے قریب 97 لوگوں کا قتل کر دیا تھا۔نرودا پاٹیا معاملے میں گزشتہ سال گجرات ہائی کورٹ نے بجرنگ دل کے لیڈر بابو بجرنگی کو قصوروار قرار دیا تھا لیکن ثبوتوں کی غیر موجودگی سے سابق بی جے پی وزیر مایا کوڈنانی کو بری کر دیا تھا۔


اس معاملے میں سپریم کورٹ کے جسٹس اے ایم کھانولکر کی صدارت والی بنچ نے منگل کو چار اہم قصورواروں کو ضمانت دےدی۔ اس کے ساتھ ہی بنچ نے کہا کہ ان کو قصوروار قرار دئے جانے پر شک ہے۔ اس معاملے میں ابھی بحث کی گنجائش ہے اس لئے انہیں ضمانت پر رہا کیا گیا۔ ان سبھی قصورواروں کو آئی پی سی کی دفعہ 436 ( گھر کو برباد کرنے کے ارادے سے آگ لگانا یا دھماکہ کرنا) کے تحت قصوروار ٹھہرایا گیا تھا۔


واضح ہو کہ احمد آباد کے نرودا پاٹیا علاقے میں 28 فروری 2002 کو مشتعل ہجوم نے اقلیتی کمیونٹی کے قریب 97 لوگوں کا قتل کر دیا تھا۔ ت

First published: Jan 23, 2019 01:21 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading