உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    طلاق ثلاثہ بل کے خلاف خواتین کے مظاہرہ کیلئے ممبئی میں جگہ جگہ بیداری میٹنگ کا سلسلہ جاری

    علامتی تصویر

    علامتی تصویر

    ممبئی میں آئندہ سنیچر 31مارچ کو تاریخی آزاد میدان میں طلاق ثلاثہ بل کے خلاف اور تحفظ شریعت کے لئے ہونے والے خواتین کے مظاہرہ کے لیے شہر میں تیاریاں کی جارہی ہیں اور اس کے لیے شہر کے مسلم اکثریتی اور دیگر علاقوں میں میٹنگ کا سلسلہ جاری ہے

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      ممبئی27۔ممبئی میں آئندہ سنیچر 31مارچ کو تاریخی آزاد میدان میں طلاق ثلاثہ بل کے خلاف اور تحفظ شریعت کے لئے ہونے والے خواتین کے مظاہرہ کے لیے شہر میں تیاریاں کی جارہی ہیں اور اس کے لیے شہر کے مسلم اکثریتی اور دیگر علاقوں میں میٹنگ کا سلسلہ جاری ہے ،جس کے تحت آج شام جنوب وسطی ممبئی کے شیح مصری انٹاپ ہل علاقے میں احتجاج کو کامیاب کرنے کے لیے حکمت عملی مرتب کرنے کے لیے ایک میٹنگ کا انعقاد کیا ،جس میں اتفاق رائے سے فیصلہ کیا گیا کہ تحفظ شریعت کے لیے ہرممکن اقدامات کیے جائیں اور تمام فرقوں اورمسالک کے عوام کو ساتھ لیکر چلا جائیگا۔
      تحفظ شریعت کی مذکورہ میٹنگ کا انعقاد معروف صحافی جاوید جمال الدین نے  محی الدین بھٹکلی شاہ بابا ؒ کے آستانہ کے احاطہ میں کیا۔

      ،اس موقع پر مقامی کارپوریٹر مفتی سفیان ونو،مولانا صادق رضا،سماجی رہنماء سلیم الوارے اور اے ایم پی کے روح رواں عامر ادریسی اور جاوید جمال الدین نے خطاب کیا ۔ابتداء میں سلیم الوارے نے شریعت کے خلاف حکومت کے طلاق ثلاثہ بل کے خلاف مسلم خواتین کے احتجاج کے بارے میں تفصیل پیش کرتے ہوئے کہا کہ آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کے زیراہتمام جے پور،لکھنؤ،اورنگ آباد ،پٹنہ سمیت تقریباً 80لاکھ مسلم خواتین نے شریعت کے تحفظ کے لیے سڑکوں پر نکل کر احتجاج میں حصہ لیا اور آئندہ سنیچر 31مارچ کو بھی ممبئی کی خواتین احتجاج میں حصہ لیں گے۔

      انہوں نے گزشتہ روز پڑوسی تھانے ضلع کے مسلم اکثریتی علاقے ممبرا میں ہزاروں کی تعداد میں خواتین کی شرکت کی ستائش کی ۔
      First published: