ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

ممبئی آتشزدگی حادثے کا بھیانک ویڈیو، ادھو ٹھاکرے نے مانگی معافی، کہا۔جو بھی ذمے دار ہے بخشا نہیں جائے گا

ممبئی کے بھانڈوپ میں واقع اسپتال میں آتشزدگی کامعاملہ۔سی ایم اُدھو ٹھاکرے نے جانچ کا دیا حکم۔کہا قصورواروں کو نہیں جائے گا بخشا۔ ادھو ٹھاکرے نے 5-5 لاکھ روپے معاوضے دینے کا اعلان کیا ہے۔ وزیر اعلی نے آگ کے باعث پیش آنے والے حادثے میں ہلاک ہونے والوں کے لواحقین سے معافی مانگی ہے۔

  • Share this:

ممبئی کے بھانڈوپ میں واقع اسپتال میں آتشزدگی کے معاملے میں سی ایم اُدھو ٹھاکرے (Uddhav Thackeray) نے جانچ کا حکمدیا اور کہا قصورواروں کو نہیں جائے گا بخشا۔ سن رائز اسپتال (Fire At Sunrise Hospital ) میں لگی آگ سےاب تک دس افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔ مہاراشٹرا کے شہر ممبئی کے ایک کووڈ اسپتال میں آتشزدگی سے متاثرہ افراد کے لواحقین کو مہاراشٹر کے وزیر اعلی ادھو ٹھاکرے نے 5-5 لاکھ روپے معاوضے دینے کا اعلان کیا ہے۔ وزیر اعلی نے آگ کے باعث پیش آنے والے حادثے میں ہلاک ہونے والوں کے لواحقین سے معافی مانگی ہے۔


وزیراعلیٰ  Uddhav Thackeray نے کہا کہ اس اسپتال کو کورونا وبا کے وقت اجازت دی گئی تھی اور اس کی اجازت 31 مارچ کو ختم ہونے والی تھی لیکن اس سے قبل ہی یہ خوفناک حادثہ پیش آیا۔ انہوں نے بتایا کہ آگ اس کووڈ اسپتال میں نہیں بلکہ مال کے ایک دکان میں لگی تھی جہاں سے پھیلتے ہوئے یہ اسپتال تک پہنچ گئی۔ انہوں نے کہا کہ جو بھی اس واقعے کا ذمہ دار ہے اس پر کارروائی کی جائے گی۔



مہاراشٹر  maharashtra  کے ممبئی میں واقع ایک اسپتال میں آگ لگ گئی تھی۔ حادثہ بھانڈُپ علاقے کا ہے ، جہاں ڈریم مال میں آتشزدگی کاواقعہ پیش آیا ۔ اس مال میں تیسری منزل پرایک اسپتال بھی تھا ، جہاں ستر سے زیادہ مریض  ( Hospital Over 70 Covid Patients) موجود تھے ۔ ان میں سے زیادہ تر کورونا کے مریض تھے۔ میڈیکل رپورٹ کے مطابق کورونا کی وجہ سے دومریض کی موت بھی ہو گئی ۔ حادثےکے بعد فائربرگیڈ کی مدد سے اسپتال کے اندر سے تمام مریضوں کونکال کر دوسرے اسپتالوں میں متقل کیا گیا۔ وہیں  سن رائز اسپتال کے آپریشن ہیڈ ستیندر تیواری کاکہناہےکہ آگ اسپتال میں نہیں لگی تھی بلکہ مال میں آتشزدگی ہوئی اور اس کا دھواں اسپتال میں آیا۔
Published by: Sana Naeem
First published: Mar 27, 2021 10:56 AM IST