ہوم » نیوز » No Category

قبر سے لاش نکال کر گھر واپس بھیجنے کے واقعہ کی چوطرفہ مذمت

ادئے پور : ادے پور میں قبر سے لاش نکال کر گھر واپس بھیجنے کے معاملے کی چوطرفہ مذمت جاری ہے۔ اختلاف مسلک کی بنیاد پر قبر سے نکال کر لاش کی بے حرمتی پر مسلم معاشرے کے تمام مذہبی پیشواؤں نے متحد ہو کر مذمت کی ہے اور ایسی حرکت کرنے والوں کے خلاف سخت سے سخت کاروائی کا مطالبہ کیا ہے۔ علما کا کہنا ہے کہ یہ مسلم معاشرہ کو بانٹنے کی سازش تھی ، لیکن مسلم معاشرہ مکمل طور پر متحد ہے۔

  • ETV
  • Last Updated: Feb 17, 2016 07:07 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
قبر سے لاش نکال کر گھر واپس بھیجنے کے واقعہ کی چوطرفہ مذمت
ادئے پور : ادے پور میں قبر سے لاش نکال کر گھر واپس بھیجنے کے معاملے کی چوطرفہ مذمت جاری ہے۔ اختلاف مسلک کی بنیاد پر قبر سے نکال کر لاش کی بے حرمتی پر مسلم معاشرے کے تمام مذہبی پیشواؤں نے متحد ہو کر مذمت کی ہے اور ایسی حرکت کرنے والوں کے خلاف سخت سے سخت کاروائی کا مطالبہ کیا ہے۔ علما کا کہنا ہے کہ یہ مسلم معاشرہ کو بانٹنے کی سازش تھی ، لیکن مسلم معاشرہ مکمل طور پر متحد ہے۔

ادئے پور : ادے پور میں قبر سے لاش نکال کر گھر واپس بھیجنے کے معاملے کی چوطرفہ مذمت جاری ہے۔ اختلاف مسلک کی بنیاد پر قبر سے نکال کر لاش کی بے حرمتی پر مسلم معاشرے کے تمام مذہبی پیشواؤں نے متحد ہو کر مذمت کی ہے اور ایسی حرکت کرنے والوں کے خلاف سخت سے سخت کاروائی کا مطالبہ کیا ہے۔ علما کا کہنا ہے کہ یہ مسلم معاشرہ کو بانٹنے کی سازش تھی ، لیکن مسلم معاشرہ مکمل طور پر متحد ہے۔


خیال رہے کہ اس سلسلہ میں سنی معاشرے کے مفتی نے پہلے ہی بیان جاری کر کے اس کوناقابل برداشت واقعہ قرار دے چکے ہیں۔ اسلام کی تعلیم ایسی نہیں کہ ہے کہ اس طرح کی حرکتوں کو انجام دیا جائے۔ ایسی حرکت کرنے والوں کے خلاف سخت کاروائی کا مطالبہ کیا جا ری ہے۔


بتایا جاتاہے کہ واقعہ کی جانچ کے بعد میں ایک نئی بات سامنے آئی ہے ۔ یہ کوئی فرقے یا مسلک کی لڑائی نہیں تھی ، بلکہ باہمی رنجش تھی ، جس کے ذریعہ مسلم معاشرہ کو بانٹنے کی کوشش کی گئی تھی۔

First published: Feb 17, 2016 07:07 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading