ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

اونا سانحہ سے دلبرداشتہ گجراتی دلت ادیب نے لوٹایا ایوارڈ

مكوانا کے مطابق دلتوں کو جس طرح سے زدوکو ب کیا گیا ، اس ویڈیو کو دیکھ کر وہ کافی دلبرداشتہ ہو گئے ہیں اور انہوں نے ایوارڈ لوٹانے کا فیصلہ کیا ۔ مكوانا نے کہا کہ دلتوں پر ایسا ظلم قابل مذمت ہے۔

  • Pradesh18
  • Last Updated: Jul 27, 2016 06:47 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
اونا سانحہ سے دلبرداشتہ گجراتی دلت ادیب نے لوٹایا ایوارڈ
مكوانا کے مطابق دلتوں کو جس طرح سے زدوکو ب کیا گیا ، اس ویڈیو کو دیکھ کر وہ کافی دلبرداشتہ ہو گئے ہیں اور انہوں نے ایوارڈ لوٹانے کا فیصلہ کیا ۔ مكوانا نے کہا کہ دلتوں پر ایسا ظلم قابل مذمت ہے۔

احمد آباد : گجراتی دلت ادیب امرت لال مكوانا نے بدھ کو احمد آباد کلکٹر آفس میں جا کر داسی جیون دلت ساہتیہ کرتی ایوارڈ لوٹا دیا ۔ اس ایوارڈ کے ساتھ ان ملی 25 ہزار روپے کی رقم بھی انہوں نے واپس کردی ۔

اونا میں دلتوں کے ساتھ گیوركشا کے نام پر مار پیٹ کی ویڈیو سامنے آنے کے بعد مكوانا یہ نے ایوارڈ لوٹا یا ہے۔ گجرات حکومت نے مكوانا کو 2012-13 کا داسی جیون سریشٹھ دلت ساہتیہ کرتی ایوارڈ دیا تھا۔ انہیں 25 ہزار روپے نقد، ایک سرٹیفکیٹ اور شال دے کر نوازا گیا تھا۔

مكوانا کے مطابق دلتوں کو جس طرح سے زدوکو ب کیا گیا ، اس ویڈیو کو دیکھ کر وہ کافی دلبرداشتہ ہو گئے ہیں اور انہوں نے ایوارڈ لوٹانے کا فیصلہ کیا ۔ مكوانا نے کہا کہ دلتوں پر ایسا ظلم قابل مذمت ہے۔

انہوں نے کہا کہ ویڈیو نے مجھے اندر تک ہلا دیا۔ دکھ کی بات ہے کہ ایسے واقعات ہمارے ارد گرد مسلسل ہو رہے ہیں۔ ایسے میں دلت ہو کر بھی ، اگر میں اس ایوارڈ کو اپنے پاس رکھتا ، تو میرے ادیب ہونے پر لعنت ہے۔

First published: Jul 27, 2016 06:46 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading