உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بچوں کو ویکسین کے بوسٹر ڈوز کی ضرورت ہوگی؟ WHO کی چیف سائنسداں نے دیا یہ جواب

    بچوں کو ویکسین کے بوسٹر ڈوز کی ضرورت ہوگی؟ WHO کی چیف سائنسداں نے دیا یہ جواب

    بچوں کو ویکسین کے بوسٹر ڈوز کی ضرورت ہوگی؟ WHO کی چیف سائنسداں نے دیا یہ جواب

    WHO top scientist reacts on vaccine booster dose : ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن (WHO) کی ٹاپ سائنسداں سومیہ وشوناتھن نے کہا کہ اس بات کا کوئی ثبوت نہیں ہے کہ صحتمند بچوں اور نوعمر بچوں کو ویکسین کا بوسٹر ڈوز دینے کی ضرورت ہوگی ۔ اومیکران ویریئنٹ کو لے کر انہوں نے کہا کہ ضروری نہیں ہے کہ ہر ویریئنٹ کو دھیان میں رکھتے ہوئے ٹیکہ کاری میں تبدیلی کی جائے ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : دنیا کے کئی ممالک میں اومیکران ویریئنٹ (Omicron Variant) کی وجہ سے کورونا وائرس انفیکشن پر کنٹرول پانے کیلئے کورونا ویکسین کے بوسٹر ڈوز  (Covid-19 Vaccine Booster Dose) پر تیاری چل رہی ہے ۔ اس درمیان ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن (WHO) کی ٹاپ سائنسداں سومیہ وشوناتھن نے کہا کہ اس بات کا کوئی ثبوت نہیں ہے کہ صحتمند بچوں اور نوعمر بچوں کو ویکسین کا بوسٹر ڈوز دینے کی ضرورت ہوگی ۔ اومیکران ویریئنٹ کو لے کر انہوں نے کہا کہ ضروری نہیں ہے کہ ہر ویریئنٹ کو دھیان میں رکھتے ہوئے ٹیکہ کاری میں تبدیلی کی جائے ۔

      بدھ کو پریس کانفرنس کے دوران ڈٓاکٹر سومیہ وشوناتھن نے کہا کہ فی الحال اس بات کا کوئی ثبوت نہیں ہے کہ صحتمند بچوں اور نوعمروں کو کورونا ویکسین کے بوسٹر ڈوز کی ضرورت ہوگی ۔ دراصل عالمی صحت تنظیم کی ٹاپ ڈاکٹر کا یہ بیان اس وقت آیا ہے جب امریکہ ، جرمنی اور اسرائیل جیسے ممالک نے بچوں کو بوسٹر ڈوز دینے کی شروعات کردی ہے ۔

      جبکہ ہندوستان میں اس مہینے کی شروعات میں 15 سے 18 سال کے بچوں کے دوران ویکسینیشن کی شروعات ہوئی ہے ۔ وہیں امریکہ میں فوڈ اینڈ ڈرگ ایڈمنسٹریشن نے 12 سے 15 سال کے بچوں کیلئے فائزر اور بایواین ٹیک کی کووڈ 19 ویکسین کو بوسٹر ڈوز کے طور پر استعمال کرنے کی منظوری دی ہے ۔

      امریکہ جیسے ترقی یافتہ ممالک میں بچوں کو ویکسین کا بوسٹر ڈوز دیا جارہا ہے ۔ وہیں دوسری جانب ڈبلیو ایچ او نے اس بات سے اتفاق ظاہر نہیں کیا کہ آبادی کے کمزور گروپ سے وابستہ لوگوں کو بوسٹر ڈوز کی ضرورت نہیں ہے ۔ ڈاکٹر سومیہ نے کہا کہ اس ہفتے کے آخر میں نامور ماہرین تعلیم کا ایک گروپ اس موضوع پر بات کرے گا کہ حکومتوں کو ویکسین کی بوسٹر ڈوز پر دوبارہ غور کرنا چاہئے ۔

      ڈاکٹر سومیہ نے کہا کہ بوسٹر ڈوز کا بنیادی مقصد اس کمزور طبقے کے لوگوں کو کووڈ-19 سے تحفظ فراہم کرنا ہے ، جس میں سنگین بیماریوں اور موت کا خطرہ زیادہ ہوتا ہے ۔ اس میں سن رسیدہ آبادی کے ساتھ ساتھ ہیلتھ ورکرز بھی شامل ہیں ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: