ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

پنجاب آبروریزی معاملہ: بچی سے آبروریزی اور قتل کے معاملے پر راہل - پرینکا سے بی جے پی کا تلخ سوال

بی جے پی نے پنجاب کے ہوشیار پور کے ٹانڈا گاوں میں بہار سے تعلق رکھنے والے مہاجرکنبہ کی بچی کی عصمت دری کے واقعہ پر کانگریس کے رہنما راہل گاندھی کی مذمت کرتے ہوئے پوچھا ہے کہ ہاتھرس میں احتجاج کرنے والے کانریس کے سابق صدر ہوشیار پور کیوں نہیں جاتے؟

  • Share this:
پنجاب آبروریزی معاملہ: بچی سے آبروریزی اور قتل کے معاملے پر راہل - پرینکا سے بی جے پی کا تلخ سوال
پنجاب آبروریزی معاملہ: بچی سے آبروریزی اور قتل کے معاملے پر راہل - پرینکا سے بی جے پی کا تلخ سوال

نئی دہلی: بہار اسمبلی انتخابات 2020 (Bihar Assembly Elections 2020) کے دوران ایک بار پھر ہاتھرس اجتماعی آبروریزی (Hathras Gang Rape) کا معاملہ اٹھا ہے۔ بی جے پی نے پنجاب میں بہار کے ایک مائیگرینٹ فیملی کی 6 سالہ معصوم بچی کی مبینہ آبروریزی اور قتل کے معاملے میں کانگریس پر تنقید کی اور اپوزیشن جماعت کے لیڈروں راہل گاندھی اور پرینکا گاندھی واڈرا سے سوال کیا کہ وہ متاثرہ کی فیملی سے ملنے ابھی تک کیوں نہیں گئے؟ مرکزی وزیر اور بی جے پی لیڈر پرکاش جاوڈیکر (Prakash Javadekar) نے راہل گاندھی (Rahul gandhi) اور ان کی بہن پرینکا گاندھی واڈرا (Priyanka Gandhi) پر اترپردیش کے ہاتھرس میں ’سیاسی دورے‘ پر جانے کا الزام لگایا۔ ہاتھرس میں ایک دلت لڑکی کی مبینہ طور پر اجتماعی آبروریزی کی گئی تھی اور بعد میں اس کی موت ہوگئی تھی۔


بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے پنجاب کے ہوشیار پور کے ٹانڈا گاوں میں بہار سے تعلق رکھنے والے مہاجر کنبہ کی بچی کی عصمت دری کے واقعہ پر کانگریس کے رہنما راہل گاندھی کی مذمت کرتے ہوئے پوچھا ہے کہ ہاتھرس میں احتجاج کرنے والے کانریس کے سابق صدر ہوشیار پور کیوں نہیں جاتے؟ بی جے پی کے رہنما اور مرکزی وزیر پرکاش جاوڈیکر نے ہفتہ کے روز ایک بیان میں کہا ’’ٹانڈہ گاؤں میں بہار کے دلت مہاجر مزدور کی 6 سالہ بیٹی کے ساتھ زیادتی کی گئی اور اس کے بعد قتل کردیا گیا۔ یہ کتنا تکلیف دہ اور شرمناک واقعہ ہے۔ ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ کانگریس حکومت مجرموں کو گرفتار کرے اور سخت کارروائی کرے۔‘‘


مرکزی وزیر پرکاش جاوڈیکر نے ہفتہ کے روز ایک بیان میں کہا ’’ٹانڈہ گاؤں میں بہار کے دلت مہاجر مزدور کی 6 سالہ بیٹی کے ساتھ زیادتی کی گئی اور اس کے بعد قتل کردیا گیا۔ یہ کتنا تکلیف دہ اور شرمناک واقعہ ہے۔ ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ کانگریس حکومت مجرموں کو گرفتار کرے اور سخت کارروائی کرے۔‘‘
مرکزی وزیر پرکاش جاوڈیکر نے ہفتہ کے روز ایک بیان میں کہا ’’ٹانڈہ گاؤں میں بہار کے دلت مہاجر مزدور کی 6 سالہ بیٹی کے ساتھ زیادتی کی گئی اور اس کے بعد قتل کردیا گیا۔ یہ کتنا تکلیف دہ اور شرمناک واقعہ ہے۔ ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ کانگریس حکومت مجرموں کو گرفتار کرے اور سخت کارروائی کرے۔‘‘


مرکزی وزیر پرکاش جاوڈیکر نے کہا کہ ’’راہل گاندھی سیاسی دورے پر ہاتھرس جاتے ہیں، اس کے بجائے انہیں پنجاب ، راجستھان جانا چاہئے۔ ان کی حکومتوں میں خواتین کے ساتھ ناانصافی کی جارہی ہے، ان کے ساتھ زیادتی کی جارہی ہے۔ کانگریس حکومت والی ریاست پنجاب میں ٹانڈا گاؤں کی بیٹی کے گھر والوں سے ملاقات نہیں کی۔ نہ تو راہل گاندھی ٹانڈہ گئے اور نہ ہی پرینکا گاندھی۔ کانگریس کی صدر سونیا گاندھی نے بھی اس واقعہ پر کوئی بیان نہیں دیا ہے۔ ہم اس کی مذمت کرتے ہیں، ہم تیجسوی یادو سے یہ بھی کہتے ہیں کہ وہ بہار کی بیٹی کے ساتھ ہونے والے مظالم پرخاموش رہنے والوں کے ساتھ پرچار کرتے ہیں، یہ کیسے چلے گا؟ ‘‘
Published by: Nisar Ahmad
First published: Oct 24, 2020 06:56 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading