ہوم » نیوز » وطن نامہ

کیوں پانی اور حفظان صحت ، صحتمند مستبقل کیلئے قیل و قال سے بالاتر ہے

گزشتہ سال کے تجربات نے ہمیں حفظان صحت کی اہمیت کو بتادیا ہے ۔ نہ صرف ایک ذاتی عادت کے طور پر بلکہ عوامی ترجیح کے طور پر بھی ۔ اس نے ہمارے ماحولیاتی نظام کی کمزوری کو ظاہر کیا ہے اور اس بات کا اعادہ کیا ہے کہ کیسے ایک پائیدار مستقبل کی شروعات پائیدار آبی وسائل اور غیر مشروط رسائی کے ساتھ ہونی چاہئے ، جو ہماری برادریوں اور ہماری قوم کی صحت کے لئے پہلی شرط ہے ۔

  • Share this:
کیوں پانی اور حفظان صحت ، صحتمند مستبقل کیلئے قیل و قال سے بالاتر ہے
کیوں پانی اور حفظان صحت ، صحتمند مستبقل کیلئے قیل و قال سے بالاتر ہے

گزشتہ سال کے تجربات نے ہمیں حفظان صحت کی اہمیت کو بتادیا ہے ۔ نہ صرف ایک ذاتی عادت کے طور پر بلکہ عوامی ترجیح کے طور پر بھی ۔ اس نے ہمارے ماحولیاتی نظام کی کمزوری کو ظاہر کیا ہے اور اس بات کا اعادہ کیا ہے کہ کیسے ایک پائیدار مستقبل کی شروعات پائیدار آبی وسائل اور غیر مشروط رسائی کے ساتھ ہونی چاہئے ، جو ہماری برادریوں اور ہماری قوم کی صحت کے لئے پہلی شرط ہے ۔


اگرچہ اس نئے حالات نے منتظمین اور افراد کے ذریعہ پانی کے تحفظ اور حفظان صحت کی تحریکات کو شروع کرنے کی کوششوں کو انسپائر کیا ہے ، لیکن ایک صاف ستھرا اور صحتمند مستقبل بنانے کیلئے ہم میں سے ہرایک کے طرز عمل میں تبدیلی درکار ہے ۔ اس کے لئے ایک ایکشن پلان کی ضرورت ہے جو کسی فرد کی ذمہ داریوں کے مطابق بنایا جاسکے اور ایک مقصد ، جس سے اس ملک کا ہر شہری الفاظ اور عمل سے اپنی وفاداری کا وعدہ کر سکے ۔


یہ مقصد نیوز 18 اور ہارپک انڈیا کی پہل مشن پانی کے مرکز میں ہے ، جو بہتر حفظان صحت اور پانی کے تحفظ کے اہداف کی کوششوں کو یکجا کرنے کے لئے ایک قومی پلیٹ فارم بن گیا ہے ۔ خیالات کے ایک مرکز کی حیثیت سے ، اس نے ملک بھر میں بہترین طریقوں کو پھیلانے میں مدد کی ہے اور ان لوگوں کے مابین اتحاد کی ایک طاقت بن گیا ہے ، جو اس کی قیادت کررہے ہیں اور ان افراد کو بااختیار بناتا ہے ، جو اس مشن میں حصہ لینا چاہتے ہیں۔


چونکہ پانی کا تحفظ اور حفظان صحت ایک طویل عرصے سے مرکزی اور ریاستی انتظامیہ کے لئے ایک تشویش کا باعث بنی ہوئی ہے ، مشن پانی بغیر کسی رکاوٹ کے موجودہ حکومتی اقدامات پر عمل پیرا ہے ، اس سے ہم آہنگی کا رشتہ قائم ہوتا ہے جو مواصلات کی توسیع کرتا ہے اور صحت اور رسائی کو یقینی بنانے کے اہم مقصد کی طرف بڑھنے میں ہماری مدد کرتا ہے۔

اور یہ اعادہ کرنے کے لئے کہ پانی کی کثرت سے صحت مند ہندوستان بنانے سے متعلق مشن پانی کا مقصد کس طرح ایک لڑائی ہے جس سے ہم سبھی کو نمٹنے میں تعاون کرنا چاہئے، ہمارے پاس اکشے کمار ہیں جو عام آدمی کے ہیرو ہیں، رضاکاروں کو اس اقدام میں شامل ہونے کی تلقین کر رہے ہیں۔ اس پیغام کی ان کے ذریعہ کی گئی توثیق اس خیال کی وسعت کو ظاہر کرتی ہے اور یہ ایک ایسی لڑائی ہے جو ہمارے مستقبل کی شکل کا تعین کرے گی۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Nov 16, 2020 12:18 PM IST