ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

صرف7دنوں میں کوروناسے 3,500اموات! کرناٹک میں وبائی مرض کی مہلک ترین صورت حال

ماہرین کی رائے ہے کہ ان اموات کی زیادہ تر اطلاع اپریل کے آخری دو ہفتوں کے مریضوں کی تھی اور یہ کہ مئی میں پائے جانے والے واقعات میں اضافے سے ہونے والی اموات ماہ کے آخری دو ہفتوں میں منظر عام پر آئیں گی اور ممکنہ طور پر اس میں اضافہ ہوا ہے۔

  • Share this:
صرف7دنوں میں کوروناسے 3,500اموات! کرناٹک میں وبائی مرض کی مہلک ترین صورت حال
ریاست میں7 سے 13 مئی کے درمیان 2.9 لاکھ سے زیادہ اموات ریکارڈ کی گئی ہے۔ مئی کے دوسرے ہفتے میں ہلاکتوں کی تعداد پہلے ہفتے کے مقابلے میں دوگنا تھی۔

کرناٹک میں صرف ساتھ دنوں میں کورونا سے 3,500 اموات ریکارڈ کی گئی ہے۔ کرناٹک میں عالمی وبا کورونا وائرس (COVID-19) پھیلنے کے بعد 7 اور 13 مئی کے درمیان سب سے زیادہ کووڈ۔19 اموات کی اطلاع ملی ہے۔اگست 2020 کے مہینے میں پہلی کووڈ۔19 لہر کے عروج کے دوران 3388 اموات ریکارڈ کی گئیں۔ کرناٹک میں رواں سال مئی کے مہینے میں 5000 اموات ہوئیں جن میں صرف 2700 واقعات ہیں۔ مئی میں ریاست کے لئے روزانہ موت کی اوسط 400 کے قریب رہی ہے جبکہ بنگلورو میں 211 تھی۔


کرناٹک میں 24 سے 30 اپریل کے درمیان ہلاکتوں کی تعداد 107 فیصد بڑھ گئی جبکہ یکم مئی سے 6 مئی کے درمیان 1688 اموات ہوئی جو 7 سے 13 مئی تک وبائی امراض کا مہلک ترین ہفتہ ہیں۔جبکہ رواں ماہ کے پہلے چھ دنوں میں 2.6 لاکھ سے زیادہ کیس رپورٹ ہوئے ، ریاست میں7 سے 13 مئی کے درمیان 2.9 لاکھ سے زیادہ اموات ریکارڈ کی گئی ہے۔ مئی کے دوسرے ہفتے میں ہلاکتوں کی تعداد پہلے ہفتے کے مقابلے میں دوگنا تھی۔


علامتی تصویر
علامتی تصویر


ماہرین کی رائے ہے کہ ان اموات کی زیادہ تر اطلاع اپریل کے آخری دو ہفتوں کے مریضوں کی تھی اور یہ کہ مئی میں پائے جانے والے واقعات میں اضافے سے ہونے والی اموات ماہ کے آخری دو ہفتوں میں منظر عام پر آئیں گی اور ممکنہ طور پر اس میں اضافہ ہوا ہے۔

ٹی او آئی سے بات کرتے ہوئے بی بی ایم پی کے چیف کمشنر گوراو گپتا نے کہا کہ آخری لہر کے برعکس اس لہر سے وابستہ مسائل حقیقی ہیں ، صحت کا نظام اپنی حد تک بڑھا ہوا ہے اور معاملات میں غیر معمولی اضافے نے آکسیجن کی فراہمی اور اسپتال پر بہت زیادہ بوجھ ڈال دیا ہے۔

انھوں نے کہا کہ ’’اس سال آپ نے سنا ہے کہ مریضوں کو ایمبولینسیں یا بستر نہیں مل رہے، یہ بہت ہی بھیانک صورت حال ہے‘‘۔دریں اثنا کرناٹک کی حکومت نے جمعہ سے 18 سے 44 سال کی عمر کے گروپ کے لئے کووڈ۔19 کی عارضی طور پر معطل کردی ہے ، کیونکہ اس کے پاس کافی ویکسین نہیں ہے۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: May 16, 2021 07:38 PM IST