உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    میٹرواوربسوں میں مفت سفرکرسکیں گی خواتین، دہلی حکومت جلد کرے گی بڑا فیصلہ

    فائل فوٹو

    فائل فوٹو

    دہلی حکومت نے کہا ہے کہ اگرکوئی تکنیکی رکاوٹ نہیں آئی تو 6 ماہ کے اندراس منصوبے کو نافذ کردیا جائے گا۔

    • Share this:
      دہلی میں آئندہ سال ہونے والے اسمبلی انتخابات کے پیش نظرسبھی سیاسی جماعتوں نے ابھی سےکمرکس لی ہے۔ الیکشن میں رائے دہندگان کواپنی طرف متوجہ کرنے کے لئےعام آدمی پارٹی (آپ) نے خواتین کومیٹرواورسرکاری بسوں میں مفت سفرکرانے کی تیاری کی ہے۔ دہلی حکومت کا یہ فیصلہ اگرنافذ کیا جاتا ہے تو میٹرواوربسوں میں سفرکرنے کے دوران خواتین کو ٹکٹ نہیں لینا ہوگا۔

      امید ظاہرکی جارہی ہے کہ اگرکوئی تکنیکی رکاوٹ نہیں آئی تو 6 ماہ کے اندراس منصوبے کو نافذ کردیا جائے گا۔ دہلی حکومت نے اس کے لئے میٹرو ریل کارپوریشن (ڈی ایم آرسی) سے تجویزپیش کرنے کوکہا ہے۔ اس کے لئے دہلی حکومت کے وزیرٹرانسپورٹ کیلاش گہلوت نے ذمہ داری بھی سنبھالتے ہوئے پیش رفت بھی شروع کردیا ہے۔

      ہرسال 1200 کروڑ روپئے کا بوجھ پڑے گا

      ایک ہندی اخبارمیں شائع خبرکے مطابق دہلی کی عام آدمی پارٹی حکومت نے دہلی میٹرو ریل کارپوریشن سے پوچھا ہے کہ وہ بتائے کہ خواتین کو دی جانے والی یہ سہولت وہ کیسے نافذ کرے گا۔ اس کےلئے مفت پاس کی سہولت دی جائے گی یا کسی دیگرمتبادل کی تلاش کرنی ہوگی۔ ایک اندازے کے مطابق اگریہ اسکیم نافذ کی جاتی ہے تو دہلی حکومت پرہرسال 1200 کروڑروپئے کا بوجھ پڑے گا۔

      بسوں کے نفاذ میں نہیں ہوگی کوئی پریشانی

      دہلی حکومت میٹرومیں سفرکے ساتھ اس منصوبہ کو بسوں میں بھی نافذ کرنا چاہتی ہے۔ ڈی ٹی سی اورکلسٹراسکیم کی بسوں میں اسے نافذ کرنے میں حکومت کے سامنے کسی بھی طرح کی کوئی پریشانی نہیں آئے گی۔ وزیرٹرانسپورٹ کیلاش گہلوت نے جمعہ کو میٹرو افسران سے اس سے متعلق ملاقات کی اوراس کا ڈرافٹ تیارکرنے کوکہا ہے۔ گہلوت نے واضح کردیا ہےکہ وہ میٹرومیں خواتین کےمفت سفرپرآنے والے اخراجات کو دہلی حکومت برداشت کرے گی۔ اس کےلئے وہ ڈی ایم آرسی کو ادائیگی کرے گی۔ غورطلب ہے کہ بسوں اورمیٹرومیں 33 فیصدی خواتین سفرکرتی ہیں۔
      First published: