ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اترپردیش: بی جے پی ریاستی دفتر کے گیٹ پر خاتون نے خود کو لگائی آگ، حالت نازک

خاتون کو سول اسپتال میں داخل کروایا گیا ہے، جہاں اس کی حالت نازک بنی ہوئی ہے۔ خاتون نےخودکشی کی کوشش کیوں کی، اس کی وجہ ابھی تک صاف نہیں ہو پائی ہے۔ پولیس خاتون سے پوچھ گچھ میں مصروف ہے۔

  • Share this:
اترپردیش: بی جے پی ریاستی دفتر کے گیٹ پر خاتون نے خود کو لگائی آگ، حالت نازک
اترپردیش: بی جے پی ریاستی دفتر کے گیٹ پر خاتون نے خود کو لگائی آگ، حالت نازک

لکھنو: اترپردیش کی راجدھانی لکھنو میں واقع بی جے پی دفتر کے گیٹ پر منگل کو ایک خاتون نے خود کو آگ لگاکرخودکشی کی کوشش کی۔ خاتون نے اپنے جلنے والی کوئی چیز ڈال کر آگ لگا لی۔ وہاں موجودہ میڈیا اہلکاروں اور سیکورٹی اہلکاروں نے آگ پر قابو پانے کی کوشش کی۔ خاتون کو سول اسپتال میں داخل کروایا گیا، جہاں اس کی حالت نازک بنی ہوئی ہے۔ وہیں خاتون نے آگ لگاکر خودکشی کی کوشش کیوں کی، اس کی وجہ ابھی تک صاف نہیں ہو پائی ہے۔ پولیس خاتون سے پوچھ گچھ میں مصروف ہے۔


حادثہ حضرت گنج کوتوالی کا ہے۔ معلومات کے مطابق، متاثرہ خاتون یوپی کے مہاراج گنج کی رہنے والی ہے، جس کی شادی اکھلیش تیواری سے ہوئی تھی۔ بتایا جارہا ہے کہ شادی کے کچھ دنوں بعد دونوں کے درمیان طلاق ہوگیا تھا۔ وہیں خاتون نے مذہب تبدیلی کرکے آصف نام کے نوجوان سے شادی کی تھی۔ شادی کے بعد آصف سعودی عرب چلا گیا تھا۔ خاتون کے مطابق، آصف کے ال خانہ اس کا مسلسل کر رہے تھے۔ استحصال سے پریشان ہوکر خاتون نے بی جے پی کے گیٹ نمبر 2 پر جلنے والی مواد ڈال کرخود کو آگ لگا لی۔ اطلاع کے بعد موقع پر پہنچی پولیس نے خاتون کو سول اسپتال میں داخل کرایا ہے، جہاں خاتون کی حالت نازک بتائی جا رہی ہے۔ سول اسپتال پر ڈی سی پی، اے ڈی سی پی انسپکٹر حضرت گنج سمیت تمام پولیس کے افسر موجود ہیں۔ اس سے پہلے وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ نے ’لو جہاد’ کے حادثات پر نوٹس لیا ہے۔


لو جہاد کے معاملے پر سخت ہوئے یوگی آدتیہ ناتھ


اس حادثے کو دیکھتے ہوئے یوگی حکومت سخت قدم اٹھانے پر غور کر رہی ہے۔ وزیر اعلیٰ یوگی آتیہ ناتھ نے ایسے حادثات کو روکنے کے لئے منصوبہ بنانے کے احکامات دیئے ہیں۔ دراصل خبروں کے مطابق، حال ہی میں میرٹھ، کانپور اور لکھیم پور کھیری میں لڑکیوں کے ساتھ مبینہ دھوکہ دہی کرکے محبت کے جال میں پھسانے کا واقعہ سامنے آیا ہے۔ میرٹھ اور لکھیم پور میں لڑکیوں کے قتل کی بات بھی کی جا رہی ہے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Oct 13, 2020 02:06 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading