ہوم » نیوز » وطن نامہ

خاتون کا جنسی استحصال کرنے کے الزام میں آر ایس ایس کا مبینہ پرچارک دلی سے گرفتار

بنگال آر ایس ایس کے پرچارک اور بی جے پی لیڈر امیلند چٹوپادھیائے کو خاتون کو شادی کا جھانسہ دے کر عصمت دری کرنے کے الزام میں دہلی سے گرفتار کیا گیا ہے۔

  • Share this:
خاتون کا جنسی استحصال کرنے کے الزام میں آر ایس ایس کا مبینہ پرچارک دلی سے گرفتار
علامتی تصویر

بنگال آر ایس ایس کے پرچارک اور بی جے پی لیڈر امیلند چٹوپادھیائے کو خاتون کو شادی کا جھانسہ دے کر عصمت دری کرنے کے الزام میں دہلی سے گرفتار کیا گیا ہے۔ میلند  ٹوپادھیائے کے خلاف بے ہالا پولس اسٹیشن میں شکایت درج کی گئی تھی۔ جس خاتون نے چٹوپادھیائے کے خلاف شکایت درج کرائی ہے وہ آر ایس ایس سے وابستہ تھی اور وہ ان کے ذریعہ بی جے پی میں شامل ہونا چاہتی تھی۔ تاہم آر ایس ایس قیادت نے اس بات کی تردید کی ہے کہ املیندو چٹو پادھیائے نام کا کوئی لیڈر جنوبی اورشمالی بنگال آر ایس ایس سے وابستہ نہیں ہے ۔

پارٹی کے ریاستی جنرل سیکریٹری سیانتن باسو نے کہا ہے کہ املیندو کے خلاف بڑی سازش رچی گئی ہے ۔کلکتہ پولس کے ذرائع کے مطابق بے ہالا پولس اسٹیشن میں خاتون نے پانچ افراد کے خلاف شکایت درج کرائی ہے ۔پانچوں افراد کے خلاف انڈین پینل کوڈ کی دفعہ 120بی (مجرمانہ سازش)417(دھوکہ دہی)اور 376(عصمت دری) کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے ۔

خاتون نے ویڈیو بیان میں دعویٰ کیا ہے کہ املیندو چٹوپادھیائے نے شادی کا جھانسہ دے کر اس کے ساتھ جنسی تعلق قائم کیا ۔املیندو چٹوپادھیائے کے ساتھ وہ پروگراموں میں شریک ہونے کیلئے متعدد مرتبہ گئیں اور پروگرام ختم ہونے کے بعد بھی وہیں ان کے ساتھ رکی رہیں ۔خاتون نے کہا کہ بعد میں چٹوپادھیائے اس سے کنارہ کشی اختیار کرنے لگے تھے اس لیے پولس میں شکایت درج کرائی ہے ۔


First published: Sep 18, 2018 09:47 AM IST