ہوم » نیوز » وطن نامہ

یمن میں 20 ہندوستانیوں کے مرنے کی خبر کی تردید، صرف سات ہندوستانی لاپتہ ہیں: وزارت خارجہ

نئي دہلی۔ وزار ت خارجہ کے ترجمان وکاس سوروپ نے آج کہا کہ یمن میں سعودی اتحاد کے فضائی حملوں کی زد میں آنے والے 20 ہندوستانیوں میں سے صرف 7 افراد لاپتہ ہیں اور ان میں سے کسی کی موت نہيں ہوئي۔

  • UNI
  • Last Updated: Sep 09, 2015 02:42 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
یمن میں 20 ہندوستانیوں کے مرنے کی خبر کی تردید، صرف سات ہندوستانی لاپتہ ہیں: وزارت خارجہ
نئي دہلی۔ وزار ت خارجہ کے ترجمان وکاس سوروپ نے آج کہا کہ یمن میں سعودی اتحاد کے فضائی حملوں کی زد میں آنے والے 20 ہندوستانیوں میں سے صرف 7 افراد لاپتہ ہیں اور ان میں سے کسی کی موت نہيں ہوئي۔

نئي دہلی۔  وزار ت خارجہ کے ترجمان وکاس سوروپ نے آج کہا کہ یمن میں سعودی اتحاد کے فضائی حملوں کی زد میں آنے والے 20 ہندوستانیوں میں سے صرف 7 افراد لاپتہ ہیں اور ان میں سے کسی کی موت نہيں ہوئي۔ یہ ہندوستانی شہری صومالیہ کے باربرا اور یمن کے موخہ بندرگاہ کے درمیان کشتی چلارہے تھے۔



گزشتہ روز سعودی اتحاد کے فضائي حملے میں 20 ہندوستانیوں کے مرنے کی خبر پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے مسٹر وکاس سوروپ نے کہا کہ دستیاب اطلاعات کے مطابق یمن کی ساحل پر کشتیوں میں سفر کرنے والے 20 ہندوستانیوں میں سے 13 زندہ ہيں۔



انہوں نے کہا کہ "ہم نے پتہ لگایا ہے کہ دو کشتیاں حملے کی زد میں آئي ہيں ، جن میں سے ایک صومالیہ کے باربرا اور یمن کے موخہ کے درمیان چلتی تھی۔ یہ کشتیاں گزشتہ روز آٹھ ستمبر کو دوپہر بعد بمباری کی زد میں آگئی تھیں، جن پر کل 20 ہندوستانی عملہ سوار تھے، جن میں سے 13 زندہ ہیں اور 7 دیگر افراد کے لاپتہ ہونے کی اطلاع ملی ہے"۔



انہوں نے کہا کہ ان ہندوستانی شہریوں کی شناخت کے بارے میں مزید کوئی اطلاع موصول نہيں ہوئي ہے۔ ترجمان نے بتایا کہ یمن میں ہندوستانی سفارتخانہ کے اہلکار مقامی حکام سے مسلسل رابطہ بنائے ہوئے ہيں اور آج وہ کشتیوں کے مالکان سے بھی ملاقات کرنے والے ہیں۔ اس ملاقات کے بعد ہی مزید اطلاعات مل سکے گی۔



واضح رہے کہ گزشتہ روز صنعاء کی ایک خبررساں ایجنسی نے اطلاع دی تھی کہ سعودی اتحاد کے فضائی حملے میں 20 ہندستانی شہریوں کی موت ہوگئی ہے۔ سعودی اتحاد نے یمن کی ایک بندرگاہ کے نزدیک ایندھن کے اسمگلروں کو نشانہ بناکر یہ حملہ کیا تھا۔

First published: Sep 09, 2015 02:42 PM IST