உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پونے دو گھنٹے چلی وزیراعظم اور یوگی آدتیہ ناتھ کی میٹنگ، پی ایم مودی نے ٹوئٹ کرکے کہی یہ بڑی بات

    یوگی آدتیہ ناتھ نے کی پی ایم مودی سے ملاقات۔

    یوگی آدتیہ ناتھ نے کی پی ایم مودی سے ملاقات۔

    بی جے پی نے 255 سیٹیں جیتی ہیں اور اس کے دو اتحادیوں نے حال ہی میں 403 رکنی ریاستی اسمبلی کے انتخابات میں 18 سیٹیں جیتی ہیں۔ سیاسی تجزیہ کاروں کا خیال ہے کہ اس جیت کے ساتھ آدتیہ ناتھ کا قد بڑھ گیا ہے، کیونکہ ریاست میں بی جے پی کی دوبارہ فتح کی کوششوں میں ان کی قیادت مرکزی تھی۔

    • Share this:
      نئی دہلی:اتر پردیش کے نگران وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ نے اسمبلی انتخابات میں بھارتیہ جنتا پارٹی (BJP) کی جیت کے بعد قومی دارالحکومت کے اپنے پہلے دورے میں اتوار کو وزیر اعظم نریندر مودی سے ملاقات کی۔ پانچ بجے شروع ہونے والی ملاقات تقریباً ڈھائی گھنٹے تک جاری رہی۔ یوگی آدتیہ ناتھ نے حلف برداری کی تقریب میں وزیر اعظم نریندر مودی کو مدعو کیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی پی ایم مودی نے یوپی میں جیت کے لیے یوگی آدتیہ ناتھ کو مبارکباد دی ہے۔


      وزیر اعظم نریندر مودی نے ٹویٹ کرکے میٹنگ کے بارے میں معلومات شیئر کیں۔ پی ایم مودی نے لکھا، آج یوگی آدتیہ ناتھ جی سے ملاقات کی۔ اتر پردیش انتخابات میں تاریخی جیت پر انہیں مبارکباد۔ گزشتہ 5 سالوں میں انہوں نے عوام کی امنگوں کو پورا کرنے کے لیے انتھک محنت کی ہے۔ مجھے یقین ہے کہ آنے والے سالوں میں وہ ریاست کو ترقی کی بلندیوں پر لے جائیں گے۔ ذرائع کے مطابق 20-21 مارچ کو یوگی آدتیہ ناتھ اتر پردیش کے اگلے وزیر اعلی کے طور پر حلف لے سکتے ہیں۔ یوگی کی نئی کابینہ کے لیے تقریباً 57 وزراء حلف لے سکتے ہیں، توقع ہے کہ 22-24 کابینہ وزیر ہوں گے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      New UP Cabinet: دلت نائب وزیراعلیٰ، کابینہ میں نئےچہرے، یوپی میںBJPکی نئی حکومت کیسی ہوگی؟

      یہ بھی پڑھیں:
      یوپی اسمبلی انتخابات میں سائیکل پنکچر کرکے BJP کے لئے'وردان بن گئی مجلس اتحاد المسلمین

      اس سے پہلے دن میں یوگی نے نائب صدر ایم وینکیا نائیڈو اور بی جے پی کے جنرل سکریٹری (تنظیم) بی ایل سنتوش سے بھی ملاقات کی۔ آدتیہ ناتھ کے دو دن تک قومی راجدھانی میں قیام کا امکان ہے۔ بی جے پی نے 255 سیٹیں جیتی ہیں اور اس کے دو اتحادیوں نے حال ہی میں 403 رکنی ریاستی اسمبلی کے انتخابات میں 18 سیٹیں جیتی ہیں۔ سیاسی تجزیہ کاروں کا خیال ہے کہ اس جیت کے ساتھ آدتیہ ناتھ کا قد بڑھ گیا ہے، کیونکہ ریاست میں بی جے پی کی دوبارہ فتح کی کوششوں میں ان کی قیادت مرکزی تھی۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: