ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

یوپی میں گئوکشی کے خلاف یوگی حکومت کا نیا قانون

یوگی حکومت نے انسداد گئو کشی قانون میں ترمیم کرکے نیا آرڈینینس جاری کیا ہے۔ آرڈینینس کے مطابق اب گئوکشی کرنے والے شخص کو پانچ لاکھ کا جرمانہ اور 10 برس کی قید با مشقت کی سزا دی جائے گی۔

  • Share this:
یوپی میں گئوکشی کے خلاف یوگی حکومت کا نیا قانون
یوپی میں گئوکشی کے خلاف یوگی حکومت کا نیا قانون

الہ آباد: یوپی میں گئو کشی کے خلاف موجودہ قانون کو مذید سخت بنا دیا گیا ہے۔ ریاست کی یوگی حکومت نے انسداد گئو کشی قانون میں بنیادی ترمیم کرکے نیا آرڈینینس جاری کیا ہے۔ اس آرڈینینس کے مطابق اب گئو کشی کرنے والے شخص کو پانچ لاکھ کا جرمانہ اور 10 برس کی قید با مشقت کی سزا دی جائے گی۔ یوگی حکومت کی طرف سے لائے گئے انسداد گئو کشی ترمیمی آرڈینینس 2020 پر سادھو سنتوں کی نمائندہ تنظیم اکھل بھارتیہ اکھاڑہ پریشد نے اپنی زبردست خوشی کا اظہار کیا ہے۔ اکھاڑا پریشد کے صدر مہنت نریندر گری نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ ترمیمی آرڈینینس لائے جانے سے گئو کشی کے واقعات پر سختی سے روک لگانے میں مدد ملے گی۔


انسداد گئو کشی ترمیمی آرڈینینس 2020 پر سادھو سنتوں کی نمائندہ تنظیم اکھل بھارتیہ اکھاڑہ پریشد نے اپنی زبردست خوشی کا اظہار کیا ہے۔
انسداد گئو کشی ترمیمی آرڈینینس 2020 پر سادھو سنتوں کی نمائندہ تنظیم اکھل بھارتیہ اکھاڑہ پریشد نے اپنی زبردست خوشی کا اظہار کیا ہے۔


مہنت نریندرگری کا کہنا ہے کہ اکھاڑہ پریشد کا دیرینہ مطالبہ تھا کہ یو پی میں گئو کشی کے پرانے قانون کو مذید سخت بنایا جائے۔ مہنت نریندرگری کا یہ بھی کہنا ہے کہ ترمیمی آرڈینینس سے گئوکشی میں ملوث افراد میں خوف کا ماحول پیدا ہوگا۔ دوسری جانب اکھل بھارتیہ ڈنڈی سنیاسی پریشد نے بھی یوگی حکومت کے اس فیصلے کا خیر مقدم کیا ہے۔ سنیاسی پریشد کے ہیڈ کواٹر پر منعقد ہونے والی مجلس عاملہ کی میٹنگ میں ترمیمی آرڈینینس کو اتفاق رائے سے منظور کیا گیا۔ سنیاسی پریشد کے صدر سوامی برہماشرم مہاراج نے کہا کہ یو پی میں گئو کشی کے خلاف قانون تو 60 کی دہائی میں ہی بن گیا تھا، لیکن اس قانون میں کئی طرح کی خامیاں موجود تھیں جس کا فائدہ گئو کشی کرنے والے عناصر اٹھایا کرتے تھے۔ اب پرانے قانون میں پائی تمام خامیوں کو دور کر لیا گیا ہے۔


یو پی گئو سیوا آیوگ نے بھی یوگی حکومت کی طرف سے ترمیمی آرڈینیس جاری کرنے پر اپنے اپنے مثبت رد عمل کا اظہار کیا ہے۔
یو پی گئو سیوا آیوگ نے بھی یوگی حکومت کی طرف سے ترمیمی آرڈینیس جاری کرنے پر اپنے اپنے مثبت رد عمل کا اظہار کیا ہے۔


انہوں نے کہا کہ نئی ترمیم سے گائے کے تحفظ میں آسانی پیدا ہو گئی ہے۔ دریں اثناء یو پی گئو سیوا آیوگ نے بھی یوگی حکومت کی طرف سے ترمیمی آرڈینیس جاری کرنے پر اپنے اپنے مثبت رد عمل کا اظہار کیا ہے۔ گئو سوا آیوگ کے رکن بھولے سنگھ نے نیوز 18 سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ترمیم شدہ آرڈینینس سے گائے کی اسمگلنگ کرنے والوں کے خلاف سخت قانونی کار روائی کرنے میں مدد ملے گی۔ بھولے سنگھ کا کہنا ہے کہ اب یو پی میں گئو کشی کے واقعات کو قطعی برداشت نہیں کیا جائے گا۔
First published: Jun 10, 2020 08:12 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading