ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

دہلی اقلیتی کمیشن کے نئے چیئرمین ذاکرخان نے چارج سنبھالا، اروند کیجریوال کا ادا کیا شکریہ

دہلی اقلیتی کمیشن کا چارج سنبھالنے کے بعد ذاکر خان نے نیوز 18 سے بات کرتے ہوئے کہا کہ وہ اتنی بڑی ذمہ داری ملنے پر دہلی کے وزیر اعلی ار ند کجریوال کے شکر گزار ہیں ا ور اس ذمہ داری اور اپنے فرائض کو پورا کرنے کی کوشش کریں گے۔

  • Share this:
دہلی اقلیتی کمیشن کے نئے چیئرمین ذاکرخان نے چارج سنبھالا، اروند کیجریوال کا ادا کیا شکریہ
دہلی اقلیتی کمیشن کے نئے چیئر مین ذاکرخان نے چارج سنبھالا

نئی دہلی: دہلی حکومت کے ذریعہ دہلی اقلیتی کمیشن کی ذمہ داری سابق کونسلر ذاکر خان کو دی گئی تھی، آج ذاکر خان نے دفترپہنچ کر چارج لیا۔ اس موقع پر ایک بڑی تعداد ان کو مبارکباد دینے بھی پہنچی۔ کمیشن کا چارج سنبھالنے کے بعد ذاکر خان نے نیوز 18 سے بات کرتے ہوئے کہا کہ وہ اتنی بڑی ذمہ داری ملنے پر دہلی کے وزیر اعلی ار ند کجریوال کے شکر گزار ہیں ا ور اس ذمہ داری اور اپنے فرائض کو پورا کرنے کی کوشش کریں گے۔ ذاکر خان نےکہا کہ دہلی میں اقلیتوں کی پریشانیوں کو دور کرنا ان کی ترجیح ہوگی کیونکہ بہت سی خامیوں کی وجہ سے اقلیتوں کو پریشانی ہوتی ہے۔


ذاکر خان نے کہا کہ آدھار کارڈ میں نام غلط ہونے سے لے کر آمدنی سرٹیفکیٹ تک بنانے کی دقتیں آتی ہیں، جس کی وجہ سے دہلی حکومت کی اسکیموں سے اقلیت کے لوگ محروم رہ جاتے ہیں وہ اس کو دور کرنے کی کوشش کریں گے۔ دہلی فساد سے متعلق ذاکر خان نے کہا کہ انھوں نے ابھی تک دہلی اقلیتی کمیشن کے ذریعہ تیار کرائی گئی رپورٹ نہیں پڑھی ہے، وہ اس کو دیکھیں گے۔ تاہم انھوں نے کہا کہ دہلی میں فساد نہیں ہونا چاہئے۔ دہلی میں ہندو مسلمان بھائی چارہ اور امن کے ساتھ رہتے آئے ہیں، لیکن لوگوں نے دہلی کا امن وامان  خراب کیا۔


واضح رہے کہ گزشتہ کئی سالوں میں دہلی میں اقلیتی کمیشن سرخیوں میں رہا اور کئی معاملوں میں مداخلت کرنے اور کاروائی کرنے کی وجہ سے تنازعات میں بھی گھرا۔ خاص طور سے فروری میں ہوئے فسادکو لے کرگزشتہ مہینہ جاری کی گئی فیکٹ فائنڈنگ رپورٹ کو لے کر تنازعہ ہوا۔


کون ہیں ذاکر خان؟

ذاکرخان اصل میں کانگریس کی شیلادکشت سرکار کے وقت کونسلر رہے ہیں۔ انہوں نے کئی بار دہلی اسمبلی انتخابات میں بھی قسمت آزمائی کی۔ سال 2017 میں کانگریس پارٹی کی طرف سے ان کا ٹکٹ کاٹ دیا گیا، جس کے بعد انھوں نے آزاد امیدوار کے طورپر کارپوریشن کاانتخاب لڑا، تاہم وہ الیکشن ہار گئے۔ اس کے بعد وہ عام آدمی پارٹی میں شامل ہو گئے تھے۔ذاکر خان نے 1998 میں گریجویشن کی ڈگری دہلی یونیورسٹی سے حاصل کی تھی۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Aug 26, 2020 10:00 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading