உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ذاکر نائیک کا NGO ملک مخالف، اینٹی ٹیرر ٹریبونل نے کہا- اسلامک ریسرچ فاونڈیشن ہندوستان کے لئے بڑا خطرہ، اس کے پختہ ثبوت موجود

    ذاکر نائیک کو لگا ایک اور جھٹکا ۔ فائل فوٹو ۔

    ذاکر نائیک کو لگا ایک اور جھٹکا ۔ فائل فوٹو ۔

    مرکز کے نوٹیفکیشن میں کہا گیا تھا کہ ذاکر کی تقاریر اور بیانات کا مقصد ایک خاص مذہب کے نوجوانوں کو ہندوستان اور بیرون ملک دہشت گردانہ کارروائیوں کے لیے ترغیب دینا ہے۔ نائک کی تقاریر مذہبی گروہوں کے درمیان دشمنی، نفرت کو فروغ دیتی ہیں۔

    • Share this:
      انسداد دہشت گردی ٹریبونل نے مسلم اسکالر ذاکر نائیک کی این جی او اسلامک ریسرچ فاؤنڈیشن (IRF) کو ملک دشمن قرار دینے کے مرکز کے فیصلے کی توثیق کر دی ہے۔ ٹربیونل نے کہا کہ وہ مرکزی حکومت کی طرف سے پیش ہونے والے سالیسٹر جنرل تشار مہتا کی طرف سے کی گئی دلیل سے پوری طرح متفق ہے۔

      مرکز کے فیصلے کی تصدیق کے لیے ذاکر نائیک اور اسلامک ریسرچ فاؤنڈیشن سے جواب طلب کیا گیا تھا۔ اس پر اسلامک ریسرچ فاؤنڈیشن نے کہا کہ مرکز کی جانب سے فاؤنڈیشن کو ملک دشمن قرار دینے کا اقدام مکمل طور پر غیر ضروری ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      آج یکم اپریل سے یہ 8 چیزیں ہوں گی مہنگی- ہوم لون کے سود پر سبسڈی ختم

      آئی آر ایف نے ٹریبونل کو اپنے جواب میں کہا کہ حکومت کے پاس ایک بھی ثبوت نہیں ہے کہ فاؤنڈیشن نے ماضی میں کسی غیر قانونی اور ملک مخالف سرگرمیوں میں ملوث رہا ہو۔ فاؤنڈیشن ایک رجسٹرڈ چیریٹی پبلک ٹرسٹ ہے، اس کا مقصد لوگوں کو معاشی ترقی فراہم کرنا، ضرورت مندوں کی مدد کرنا، تعلیمی ادارے، ہسپتال وغیرہ کا قیام ہے۔

      ساتھ ہی ٹریبونل کے حکم میں کہا گیا کہ شواہد سے ثابت ہوا ہے کہ آئی آر ایف ایسی سرگرمیوں میں ملوث ہے جو ملک کی سلامتی کے لیے خطرہ ہیں۔ اس سے ملک کا امن، فرقہ وارانہ ہم آہنگی اور سیکولرازم متاثر ہو سکتا ہے۔ اس لیے ٹربیونل 15 نومبر 2021 کے نوٹیفکیشن کی تصدیق کرتا ہے، جس میں حکومت ہند نے UAPA کے تحت IRFs پر پابندی کو مزید 5 سال کے لیے بڑھا دیا تھا۔ 2016 میں حکومت نے ذاکر نائیک کی این جی او پر پابندی لگا دی تھی۔

      یہ بھی پڑھیں:
      CNG-PNG Price:بے لگام ہوئی مہنگائی- نیچرل گیس کی قیمت ہوئی دوگنی

      کروڑوں لوگ سنتے ہیں ذاکر نائیک کی تقریر
      مرکز کے نوٹیفکیشن میں کہا گیا تھا کہ ذاکر کی تقاریر اور بیانات کا مقصد ایک خاص مذہب کے نوجوانوں کو ہندوستان اور بیرون ملک دہشت گردانہ کارروائیوں کے لیے ترغیب دینا ہے۔ نائک کی تقاریر مذہبی گروہوں کے درمیان دشمنی، نفرت کو فروغ دیتی ہیں۔ جموں و کشمیر میں ذاکر کے بیانات کو یوٹیوب پر سب سے زیادہ سرچ کیا جاتا ہے۔ اس کے بعد ذاکر کو میگھالیہ، آسام، مغربی بنگال اور منی پور میں یوٹیوب پر سب سے زیادہ سرچ کیا جا رہا ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: