بڑی خبر: ایودھیا فیصلے سے پہلے سپریم کورٹ نے یوپی کے ڈی جی پی اور چیف سکریٹری کو کیا طلب

کہا جا رہا ہے کہ سپریم کورٹ اپنے فیصلے سے پہلے دونوں افسران سے سیکورٹی بندوبست کی جانکاری لے گا۔

Nov 08, 2019 09:57 AM IST | Updated on: Nov 08, 2019 09:59 AM IST
بڑی خبر: ایودھیا فیصلے سے پہلے سپریم کورٹ نے یوپی کے ڈی جی پی اور چیف سکریٹری کو کیا طلب

سپریم کورٹ: فائل فوٹو

ایودھیا۔ دہائیوں پرانے ایودھیا رام جنم بھومی اور بابری مسجد تنازعہ معاملہ میں فیصلے کی گھڑی نزدیک آ گئی ہے۔ سپریم کورٹ نے اترپردیش کے ڈائریکٹر جنرل آف پولیس ( ڈی جی پی) او پی سنگھ اور چیف سکریٹری آر کے تیواری کو آج یعنی جمعہ کو طلب کیا ہے۔ ڈی جی پی اور چیف سکریٹری جمعہ کو دوپہر 12 بجے سپریم کورٹ میں موجود رہیں گے۔ کہا جا رہا ہے کہ سپریم کورٹ اپنے فیصلے سے پہلے دونوں افسران سے سیکورٹی بندوبست کی جانکاری لے گا۔

بتا دیں کہ 17 نومبر کو سپریم کورٹ کے چیف جسٹس رنجن گگوئی سبکدوش ہو رہے ہیں۔ اس لئے امید ہے کہ اگلے ہفتے اس معاملہ میں فیصلہ آ سکتا ہے۔ امید جتائی جا رہی ہے کہ 14 یا 15 نومبر کو سپریم کورٹ ایودھیا زمین تنازعہ پر اپنا فیصلہ سنا سکتا ہے۔ لہذا ریاست کے قانون وانتظام کی صورت حال کا جائزہ لینے کے لئے ڈی جی پی اور چیف سکریٹری کو عدالت عظمیٰ میں طلب کیا گیا ہے۔

اس سے پہلے جمعرات کو وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ نے سبھی ضلع حکام اور پولیس کپتانوں کے ساتھ ویڈیو کانفرنسنگ کر کے انہیں سختی برتنے کی ہدایت دی۔ وزیر اعلیٰ یوگی نے حکام سے کہا کہ سوشل میڈیا پر شئیر کئے گئے اشتعال انگیز پوسٹ پر فوری کارروائی کریں۔ آنے والے فیصلے کو لے کر عوام، لیڈروں اور مذہبی رہنماؤں کے ساتھ سبھی سے بات چیت مسلسل بنائے رکھیں۔

Loading...

خیال رہے کہ دہائیوں سے جاری اس تنازع کے حل پر پورے ملک کی نظریں ہیں ۔ دونوں فریق اب تک یہی کہتے آئے ہیں کہ وہ سپریم کورٹ کے فیصلے کا احترام کریں گے ۔ ہندو اور مسلم سماج نے لوگوں سے فیصلے کے پیش نظر سماجی بھائی چارہ بنائے رکھنے کی اپیل کی ہے۔

Loading...