ایودھیا کا دوسرا کیس: جانیں بابری مسجد انہدام معاملہ کا کیا ہے حال

کل 49 میں سے 22 ملزمان پر لکھنئو کی خصوصی سی بی آئی عدالت میں سماعت آخری مرحلے میں ہے۔ وہیں، 8 ملزمین پر رائے بریلی میں مقدمے چل رہے ہیں۔

Nov 09, 2019 10:28 AM IST | Updated on: Nov 09, 2019 10:54 AM IST
ایودھیا کا دوسرا کیس: جانیں بابری مسجد انہدام معاملہ کا کیا ہے حال

سپریم کورٹ کے فیصلہ کے پیش نظر ملک بھر میں سیکورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے ہیں ۔

نئی دہلی۔ ایودھیا معاملہ میں اب کچھ ہی دیر میں سپریم کورٹ کا فیصلہ آنے والا ہے۔ ایسے میں ملک بھر کی نظریں سپریم کورٹ پر ٹکی ہیں۔ حالانکہ، ایودھیا معاملہ کے علاوہ ایک اور کیس پر فیصلے کا بھی بے صبری سے انتظار ہے۔ یہ کیس ایودھیا میں 6 دسمبر 1992 کو متنازعہ بابری مسجد کی عمارت کو توڑنے کی مبینہ سازش، اشتعال انگیز تقریر اور صحافیوں سے پر حملے سے جڑا ہے۔ اس پر 49 مقدمے پچھلے 27 سالوں سے قانونی داؤ پینچ اور عدالتوں کے بھنور جال میں الجھے ہیں۔

کل 49 میں سے 22 ملزمان پر لکھنئو کی خصوصی سی بی آئی عدالت میں سماعت آخری مرحلے میں ہے۔ وہیں، 8 ملزمین پر رائے بریلی میں مقدمے چل رہے ہیں۔ 9 ایسے بھی ملزمان ہیں جن پر کہیں مقدمہ چل ہی نہیں رہا ہے۔ اس بیچ 10 ملزمان اور تقریبا 50 گواہوں کی موت بھی ہو چکی ہے۔ ملزمان میں کچھ وزیر اعلیٰ اور کابینہ وزیر بھی رہ چکے ہیں۔

Loading...

چھ دسمبر 1992 کو متنازعہ بابری مسجد۔ رام جنم بھومی عمارت کو توڑنے کی مبینہ سازش اور اشتعال انگیز تقریر کیس میں اشوک سنگھل، گری راج کشور، لال کرشن اڈوانی، مرلی منوہر جوشی، وشنو ہری ڈالمیا، ونے کٹیار، اوما بھارتی اور سادھوی رتنبھرا نامزد ملزمین ہیں۔ تعزیرات ہند کی دفعہ 153 اے، 153 بی، 505, 147 اور 149 کے تحت یہ مقدمہ رائے بریلی میں چل رہا ہے۔ ان میں اب تک 40 گواہ پیش ہوئے ہیں۔

اسی مقدمے کی بنیاد پر پولیس نے 8 دسمبر 1992 کو اڈوانی اور دیگر لیڈروں کو گرفتار کیا تھا۔ امن وامان کے پیش نظر انہیں للت پور میں ماتاٹیلا باندھ کے گیسٹ ہاؤس میں رکھا گیا تھا۔

ایودھیا میں 6 دسمبر 1992 کو بابری مسجد کا ڈھانچہ گرانے کے بعد کل 49 معاملے درج کئے گئے تھے۔ لیکن کیا آپ کو یہ پتہ ہے کہ ان میں سے ڈھانچہ گرانے کے صرف 2 معاملے تھے، باقی سب صحافیوں سے مار پیٹ اور فوٹو گرافروں کے کیمرے توڑنے، چھیننے کے تھے۔ ڈھانچہ گرانے کے ایک معاملے میں نامعلوم لوگوں کے خلاف ایف آئی آر تھی تو دوسرے میں آٹھ لوگ نامزد تھے۔ یہ سبھی کیس تھانہ رام جنم بھومی، ایودھیا میں درج کئے گئے تھے۔

Loading...