مدھیہ پردیش کے کالجوں میں ڈریس کوڈ کے نفاذ پر ہنگامہ ، اے بی وی پی نے ہی گھیرا بی جے پی کے وزیر کو

مدھیہ پردیش کے سرکاری کالجوں میں ڈریس کوڈ کے نفاذ کی اب مخالفت شروع ہو گئی ہے ۔

Aug 20, 2015 09:09 PM IST | Updated on: Aug 20, 2015 09:09 PM IST
مدھیہ پردیش کے کالجوں میں ڈریس کوڈ کے نفاذ پر ہنگامہ ، اے بی وی پی نے ہی گھیرا بی جے پی کے وزیر کو

بھوپال :  مدھیہ پردیش کے سرکاری کالجوں میں ڈریس کوڈ کے نفاذ کی  اب مخالفت شروع ہو گئی ہے ۔ جمعرات کو اس معاملے پر طلبہ کی تنظیم اکھل بھارتیہ ودیارتھی پریشد (اے بی وی پی) کے کارکنوں نے بھوپال کے ایم وی ایم  کالج میں مظاہرہ کیا اور اعلی تعلیم کے وزیر مملکت دیپک جوشی کا گھیراؤ کر کے جم کر ہنگامہ بھی کیا ۔

طلبہ کی آرا لئے بغیر ڈریس کوڈ نافذ کرنے کی بات سے بھگوا تنظیم اے بی وی پی کے کارکنان کافی ناراض ہیں ۔  اس دوران طلبہ ایم وی ایم کالج کے باہر اس وقت دھرنے پر بیٹھ گئے، جب اعلی تعلیم کے وزیر مملکت دیپک جوشی وہاں ایک پروگرام میں شامل ہونے آئے تھے ۔ اس کو لے کر کالج انتظامیہ اور کارکنوں کے درمیان ٹکراو کی صورتحال بھی پیدا ہوگئی ۔

اے بی وی پی کے کارکنوں کا کہنا ہے کہ پہلے ریاست بھر میں ڈریس کوڈ کو لے کر طلبہ میں ووٹنگ کرائی جائے اور طلبہ کی حمایت کے بعد ہی ڈریس کوڈ نافذ کیا جائے ۔ آج ایم وی ایم کالج میں اعلی تعلیم کے وزیر مملکت دیپک جوشی کے خلاف طالب علموں نے احتجاج کیا اور وزیر کا گھیراؤ کر اپنا احتجاج درج کرایا ۔

طلبہ میں شدید ناراضگی کو دیکھتے ہوئے اعلی تعلیم کے وزیر مملکت نے یقین دہانی کرائی کہ ڈریس کوڈ کا نفاذ طلبہ کی حمایت حاصل کرنے کی بعد ہی کیا جائے گا مگر اس کے بعد بھی کارکنوں کا مظاہرہ جاری رہا ۔

Loading...

قابل ذکر ہے کہ گزشتہ منگل کو مدھیہ پردیش حکومت کے اعلی تعلیم کے وزیر مملکت دیپک جوشی نے اعلان کیا تھا کہ اگلے سیشن سے سرکاری کالجوں میں ڈریس کوڈ نافذ کیا جائے گ ۔ اس کے لئے محکمہ تعلیم کی جانب سے وزیر اعلی شیوراج سنگھ چوہان کے سامنے ایک تجویز بھی پیش کی جائے گی ۔

ڈریس کوڈ کے حق میں وزیر کی دلیل

وزیرمملکت جوشی نے ڈریس کوڈ کے حق میں دلیل دیتے ہوئے بتایا کہ اس سے کالج کے طلبہ میں مساوات کا احساس پیدا ہو جائے گا ۔  کالج کے طلبہ بیرونی عناصر کے ساتھ تعلیم کے وقت میں کسی غلط سرگرمی میں ملوث ہونے سے بچیں گے ۔  سب سے بڑی بات یہ کہ بیرونی عناصر کو كالج کے کیمپس میں آنے پر لگام لگ جائے گی ۔

Loading...