وياپم گھوٹالہ: پراسرار اموات سے پردہ اٹھانے کے لئے سی بی آئی نے درج کئے مزید دو کیس

وياپم گھوٹالے میں ایک کے بعد ایک ہوئی پراسرار اموات کا راز فاش کرنے کے لئے سی بی آئی مسلسل پی ای یعنی پرائمری انکوائری درج کر رہی ہے

Aug 22, 2015 07:06 PM IST | Updated on: Aug 22, 2015 07:06 PM IST
وياپم گھوٹالہ: پراسرار اموات سے پردہ اٹھانے کے لئے سی بی آئی نے درج کئے مزید دو کیس

بھوپال : وياپم گھوٹالے میں ایک کے بعد ایک ہوئی پراسرار اموات کا راز فاش کرنے کے لئے سی بی آئی مسلسل پی ای یعنی پرائمری انکوائری درج کر رہی ہے ۔ اسی کڑی میں جمعہ کو بھی دو اموات کے لئے پی ای درج کی گئی، اسی کے ساتھ سات نئی ایف آئی آر بھی درج کی گئی ہے ۔

سی بی آئی نے گوالیار کے جھانسی روڈ تھانے میں درج ایف آئی آر میں ملزم پرمود شرما اور ایک اور ملزم نریندر پال سنگھ کی موت کے سلسلہ میں ای پی درج کی ہے ۔ ان دونوں پر ہی وياپم گھوٹالے میں ملوث ہونے کا الزام تھا ۔ نام ظاہر ہونے کے بعد ہی دونوں کی مشتبہ حالات میں موت ہو گئی تھی ، جس کے بعد مقامی پولیس نے ان کی موت کے معاملے میں تحقیقات شروع کر دی تھی ۔ اسی انکوائری کو آگے بڑھاتے ہوئے وياپم گھوٹالے کی جانچ کر رہی سی بی آئی نے پی ای درج کر لی ہے ۔

سات نئی ایف آئی آر درج

 سپریم کورٹ کے حکم پر وياپم معاملے کی تحقیقات کر رہی سی بی آئی نے پی ایم ٹی 2013 سمیت 7 مقدمات میں 1231 ملزمان کے خلاف ایف آئی آر درج کی ہے ۔  پی ایم ٹی 2013 میں ہوئی جعلسازی میں 733 لوگوں کو ملزم بنایا گیا ہے ۔ وياپم گھوٹالے میں درج ہو رہی کسی ایک ایف آئی آر کے مقابلے میں اس ایف آئی آر میں سب سے زیادہ ملزم ہیں ۔ اس معاملے میں جہاں ایس ٹی ایف 588 ملزمان کو گرفتار کر چکی ہے وہیں 480 ملزمان کے خلاف کورٹ میں چالان پیش کیا جا چکا ہے ۔

Loading...

پی ایم ٹی  2013 کے امتحان کے علاوہ سی بی آئی نے 2012 میں ہوئے پولیس کانسٹیبل بھرتی امتحان میں 8 افراد کے خلاف چيٹنگ، جعل سازی اور دھوکہ دے کر امتحان پاس کروانے کے معاملے میں ایف آئی آر درج کی ہے ۔

سال 2009 کے پی ایم ٹی امتحان میں ہوئی جعل سازی کے معاملے میں 2011 سے لے کر 2013 تک درج ہوئے معاملات میں سی بی آئی نے 470 ملزمان کے خلاف ایف آئی آر درج کی ہے ۔ ان تمام ملزمان پر غلط طریقے سے امتحان پاس کروانے اور داخلہ کروانے کا الزام ہے ۔

سپریم کورٹ نے سی بی آئی کو 24 اگست تک وياپم گھوٹالے سے منسلک تمام معاملات میں ایف آئی آر درج کرنے کی ہدایت دی ہے ۔  اس معاملے میں سی بی آئی کے ترجمان نے بتایا کہ ایف آئی آر درج کرنے کا کام تیزی سے چل رہا ہے جس کی وجہ سے 24 اگست تک ایف آئی آر درج کرنے کا کام مکمل ہو جائے گا اور تحقیقات آگے بڑھائی جائے گی ۔

Loading...