فوجی جوان کی حیوانیت: حاملہ بیوی کا کیا قتل اور باکس میں سیمنٹ وکنکریٹ بھر لاش کو دریا میں پھینک دیا

فوج کے ایک جوان نے چھ ماہ کی حاملہ اپنی بیوی کو اس کی پاکدامنی پر شک کرتے ہوئے اپنے بھائی کے ساتھ مل کر موت کے گھاٹ اتار دیا

Aug 08, 2015 06:22 PM IST | Updated on: Aug 08, 2015 06:22 PM IST
فوجی جوان کی حیوانیت: حاملہ بیوی کا کیا قتل اور باکس میں سیمنٹ وکنکریٹ بھر لاش کو دریا میں پھینک دیا

اجین : مدھیہ پردیش کے اجین میں فوج کے ایک جوان کا انتہائی خوفناک چہرہ سامنے آیا ہے ۔ فوج کے ایک جوان نے چھ ماہ کی حاملہ اپنی بیوی کو اس کی  پاکدامنی پر شک کرتے ہوئے  اپنے بھائی کے ساتھ مل کر موت کے گھاٹ اتار دیا ۔ پولیس نے ملزم دیور کو گرفتار کر لیا ہے، جبکہ شوہر کی گرفتاری کے لیے فوج کے ہیڈ کوارٹر سے رابطہ قائم کیا گیا ہے ۔

ایس پی ایم ایس ورما نے بتایا کہ 30 مارچ کو عالم پورمیں شپرا ندی میں فوج کے ایک باکس میں ایک خاتون کی لاش ملی تھی ، قتل کرنے کے بعد لاش کو گلانے اور شناخت چھپانے کے لئے کی باکس میں سیمنٹ اور كنکريٹ بھر دیا گیا تھا ۔  پولیس نے تفتیش کی تو پتہ چلا کہ اجین سے ملحقہ سانویر قصبے کی رہنے والی ٹینا زوجہ وجیش یادو کی گمشدگی کی رپورٹ درج ہے ، اسی بنیاد پر دیواس میں رہنے والے ٹینا کے والد پورالال سے رابطہ کیا گیا ، والد اور ماں نے باکس سے برآمد ہوئے  کپڑے اور دیگر سامان کی بنیاد پر اس کی شناخت ٹینا کے طور پر کی ۔

بتایا جاتا ہے کہ 30 مارچ کو ملی لاش پوری طرح سے خراب ہوچکی تھی ، جس کی سے شناخت بہت مشکل تھی ۔  سامان کی بنیاد پر شناخت ہونے کے باوجود پولیس نے تصدیق کرنے کے لئے والد کے ڈی این اے کے نمونے لئے اور پھر بعد میں نمونے کے مل جانے  کی بنیاد پر یہ واضح ہو گیا کہ لاش ٹینا کی ہی ہے ۔

ایس پی ایم ایس ورما نے مزید بتایا کہ لاش کی شناخت کے بعد شک کی بنیاد پر پولیس نے ٹینا کے دیور راہل یادو کو حراست میں لے کر پوچھ گچھ کی اور پولیس کی پوچھ گچھ میں راہل ٹوٹ گیا اور اس نے بتایا ٹینا حاملہ تھی اور بھائی وجیش کو اس کے کردار پر شک تھا  ، اسی وجہ سے 8 مارچ کو دونوں نے مل کر ٹینا کا گلا گھونٹا اور منہ میں کپڑا ٹھونس دیا ۔ فوج کے باکس میں لاش کو ڈالا اور اس میں سیمنٹ کنکریٹ بھر دیا اور  اس کے بعد باکس کو شپرا ندی میں پھینک دیا تھا ۔

Loading...

Loading...