وياپم گھوٹالہ : سپریم کورٹ نے پوچھا کتنے دنوں میں سی بی آئی سنبھالے گی تمام معاملات کی جانچ

سپریم کورٹ نے وياپم معاملے کی سماعت کرتے ہوئے سی بی آئی سے پوچھا ہے کہ وہ کب تک سارے کیس کی جانچ سنبھال لے گی

Jul 24, 2015 02:53 PM IST | Updated on: Jul 24, 2015 03:10 PM IST
وياپم گھوٹالہ : سپریم کورٹ نے پوچھا کتنے دنوں میں سی بی آئی سنبھالے گی تمام معاملات کی جانچ

بھوپال :  سپریم کورٹ نے وياپم معاملے کی سماعت کرتے ہوئے سی بی آئی سے پوچھا ہے کہ وہ کب تک سارے کیس کی جانچ  سنبھال لے گی اور ساتھ ہی سی بی آئی سے پوچھا گیا ہے کہ ٹرائل کورٹ میں وکیل کی تقرری کب تک ہو گی ۔ سی بی آئی اس معاملے میں 31 جولائی کو اپنا جواب پیش کرے گی ۔

سپریم کورٹ نے جمعہ کو وياپم معاملے کی سماعت کرتے ہوئے کہا کہ تحقیقات کی نگرانی پر فیصلہ اگلے جمعہ کو لیا جائے گا ۔ سپريم کورٹ نے دو ہفتے پہلے وياپم سے وابستہ درخواستوں کی سماعت کرتے ہوئے وياپم گھوٹالے اور اسی کی موت کی تحقیقات کا معاملہ سی بی آئی کو سوپا تھا ۔

واضح ہو کہ مدھیہ پردیش ہائی کورٹ نے بھی سپریم کورٹ کا فیصلہ آنے تک وياپم معاملے کی نگرانی کو لے کر ضمانت کی درخواستوں پر بھی سماعت فی الحال ٹال دی ہے ۔ اس سے پہلے ہائی کورٹ نے وياپم معاملے کی سماعت سے انکار کرتے ہوئے کہا تھا کہ  معاملہ سپریم کورٹ میں ہے اس لئے ہم اس میں کوئی مداخلت نہیں کر سکتے ۔

قابل ذکر ہے  کہ عدالت عظمی نے گزشتہ 9 جولائی کو وياپم معاملے کی جانچ سی بی آئی کو سونپی تھی ۔ کورٹ میں سماعت کے دوران چیف  جسٹس ایچ ایل دتو کی قیادت والی بنچ نے واضح کیا تھا کہ  تمام معاملے سی بی آئی کو منتقل کر دیے جائیں گے اور جانچ ایجنسی اپنی رپورٹ 24 جولائی کو اس کے سامنے داخل کرے گی ۔ کورٹ کے حکم کے مطابق سی بی آئی وياپم گھوٹالے میں ہفتے بھر میں کی گئی کارروائی کی رپورٹ پیش کرنے آج پہنچی ۔  اب عدالت اگلے جمعہ کو طے کرے گی کہ جانچ ایجنسی کو گھوٹالے کی جانچ میں کس طرح سے آگے بڑھنا ہے ۔

Loading...

Loading...