تیز رفتار اسكارپيو دریا میں گری، سات نوجوانوں کی موت

جھارکھنڈ کے کھونٹی میں رفتارکا کھیل سات نوجوانوں کو مہنگا پڑگیا

Jul 31, 2015 02:54 PM IST | Updated on: Jul 31, 2015 02:56 PM IST
تیز رفتار اسكارپيو دریا میں گری، سات نوجوانوں کی موت

گملا :  جھارکھنڈ کے کھونٹی میں رفتارکا کھیل سات نوجوانوں کو مہنگا پڑگیا ،  راوركلا سے لکھنؤ جا رہے سات نوجوان جب یہاں کے تجنہ پل پر پہنچے تو ان کی تیز رفتار اسكارپيو کار پل کی باونڈری کو توڑتے ہوئے دریا میں جا گری ، اس حادثے میں کار میں سوار سبھی نوجوانوں کی موت ہو گئی ہے ۔

بتایا جا رہا ہے کہ اس اسكارپيو کار میں سوار نوجوانوں کی عمر 25 اور 26 سال تھی ، عینی شاہدین کے مطابق کار کی رفتار بہت زیادہ تھی ۔ کار جیسے ہی تجنہ پل پر آئی تو کار کا ڈرائیور کنٹرول کھو بیٹھا ۔ اس کے بعد کار نے پل پر بنی باونڈری وال کو توڑتے ہوئے دریا میں جا گری ، اس حادثے میں کار کی حالت کو دیکھ کر ہی اس کے اندر بیٹھے مسافروں کی حالت کا اندازہ لگایا جا سکتا ہے ، اس حادثے میں کار میں سوار سات نوجوانوں کی موت ہو گئی ہے ۔

عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ کار کی رفتار بہت زیادہ تھی ، لوگوں کا کہنا ہے کہ کار 120 کی رفتار پر رہی ہوگی، تبھی اتنا بڑا سڑک حادثہ ہوا ہے ۔  اس واقعہ کے بعد تمام نوجوانوں کی لاشیں دریا میں بہنے لگیں ، جب اس کی اطلاع مقامی لوگوں کو ہوئی تو انہوں نے فوری طور پر دریا میں اترکر لاشوں کو دریا سے باہر نکالا ۔

و اقعہ کی اطلاع ملتے پر جھارکھنڈ پولیس کے ڈی سی، ایس پی، ایس ڈی او سمیت کئی افسران جائے واقعہ پر پہنچ گئے ہیں اور تمام ساتوں لاشوں کو پوسٹ مارٹم کے لئے بھیج دیا ہے ، اس سڑک حادثے میں ڈرائیور بری طرح زخمی ہو گیا ہے، جسے پاس کے صدر اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے جہاں اس کا علاج چل رہا ہے ۔ پولیس کا کہنا ہے کہ اس سڑک حادثے میں ہلاک ہو نے والے تمام نوجوان اوڈیشہ کے برمترا پور کے رہنے والے تھے ۔

Loading...

Loading...