رات کے اندھیرے میں ملے لالو اور نتیش

پٹنہ : ٹوئيٹر اور پوسٹر وار کے بعد بڑھی تلخی کو ختم کرنے کے لئے جمعرات کی رات کے اندھیرے میں نتیش کمار لالو پرساد یادو کے رہائش گاہ پر پہنچ گئے ۔

Jul 24, 2015 02:46 PM IST | Updated on: Jul 24, 2015 02:46 PM IST
رات کے اندھیرے میں ملے لالو اور نتیش

پٹنہ : ٹوئيٹر اور پوسٹر وار کے بعد بڑھی تلخی کو ختم کرنے کے لئے جمعرات کی رات کے اندھیرے میں نتیش کمار لالو پرساد یادو کے رہائش گاہ پر پہنچ گئے ۔

لالوکی  رہائش  گاہ پر بند کمرے میں دونوں کی بات چیت ایک گھنٹے دس منٹ تک چلتی رہی ۔  اس کے بعد جب وہ باہر نکلے تو ای ٹی وی  / نیوز 18 کے کیمرے کے سامنے انہوں نے باہمی تلخی کو یکسر مسترد کر دیا ۔  دونوں رہنماؤں نے کہا کہ تنازعہ کہیں ہے ہی نہیں ۔  سارے معاملے مل بیٹھ کر حل کرلئے جائیں گے ۔

بات چیت میں دونوں رہنماؤں نے یہ طے کیا کہ جلد ہی سیٹوں کی تقسیم کو حتمی شکل دے دی جائے گی ۔ ساتھ ہی دونوں پارٹیوں کے درمیان کوئی دوری نہیں رہے  ، اس لئے دونوں لیڈر باضابطہ طور سے ملتے رہیں گے ۔

جمعرات کی رات کے 9 بج کر 58 منٹ پر بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار کی گاڑی 7 سرکلر روڈ سے نکلی اور چند قدم دور 10 سرکلر روڈ میں جاکر رکی ۔ لالو کے گھر پہنچے نتیش ایک گھنٹے دس منٹ تک بند کمرے میں ان سے بالمشافہ بات چیت کرتے رہے ۔

Loading...

ملاقات کے بعد نتیش تو بغیر کچھ بولے نکل گئے، لیکن، ان کے انداز نے بتا دیا کہ باتیں کافی حد تک لائن پر آ گئی ہیں ۔  دونوں میں سرد جنگ کو ختم کرنے پر اتفاق ہے ۔ تنازعہ کے باقی معاملات کو دور کرنے کے لئے بھی کوششیں ہوں گی

ذرائع کے مطابق دونوں رہنماؤں کے درمیان ہوئی بات چیت میں کئی باتیں طے ہوئی ہیں ۔ نتیش نے بھوجنگ والے ٹوٹ پر صفائی دی تو لالو نے کہا کہ باہمی تکرار سے بی جے پی کو فائدہ ہو رہا ہے ۔ دونوں پارٹیاں تنازعہ کو بڑھانے والے بیانات پر روک لگائے گی ۔

دونوں رہنماؤں کی ملاقات اس سے قبل تین دن پہلے سابق وزیر اعلی ستیندر نارائن سنگھ کی جینتی کی تقریب میں ہوئی تھی ۔  گزشتہ ہفتے جے ڈی یو کے سربراہ شرد یادو کے دونوں رہنماؤں کے درمیان ثالثی کی خبروں کے بعد سے ہی دونوں کی ملاقات کو لے کر اپوزیشن سوال اٹھاتا رہا ہے ۔ نتیش کے ٹوئیٹ پر اٹھے تنازعہ کو بھی اپوزیشن نے دونوں کے درمیان بڑھتی ہوئی دوری بتانے کی کوشش کی ۔ نتیش کے اس قدم سے مخالف جماعتوں کے ساتھ ساتھ آر جے ڈی اور جے ڈی یو کے رہنماؤں کو بھی ایک مثبت پیغام ملے گا ۔

Loading...