کیجریوال کے دفتر پر سی بی آئی کے چھاپے کو نتیش کمار نے یہ ریاست کے حقوق پر حملہ قرار دیا

پٹنہ : دہلی سکریٹریٹ پر سی بی آئی کے چھاپے کی بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار نے سخت تنقید کی ہے۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وزیر اعلی نے کہا کہ اس بات پر اچانک یقین نہیں ہوتا ہے۔ انہوں نے سوال پوچھا کہ چھاپے کے بارے میں کیا وزیر اعلی کو اطلاع دی گئی تھی۔ جو بھی معاملات ہیں ، کیا وہ اب عہدہ سنبھالنے سے متعلق ہیں؟ اگر پہلے کے ہیں تو اور بھی عجیب بات ہے۔

Dec 16, 2015 12:23 AM IST | Updated on: Dec 16, 2015 12:23 AM IST
کیجریوال کے دفتر پر سی بی آئی کے چھاپے کو نتیش کمار نے یہ ریاست کے حقوق پر حملہ قرار دیا

پٹنہ : دہلی سکریٹریٹ پر سی بی آئی کے چھاپے کی بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار نے سخت تنقید کی ہے۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وزیر اعلی نے کہا کہ اس بات پر اچانک یقین نہیں ہوتا ہے۔ انہوں نے سوال پوچھا کہ چھاپے کے بارے میں کیا وزیر اعلی کو اطلاع دی گئی تھی۔ جو بھی معاملات ہیں ، کیا وہ اب عہدہ سنبھالنے سے متعلق ہیں؟ اگر پہلے کے ہیں تو اور بھی عجیب بات ہے۔

وزیر اعلی نے کہا کہ اب تک مرکز اور ریاست کے درمیان جتنے بھی حدیں رہی ہیں وہ اب ختم ہو رہی ہیں اور اس بات پر یقین نہیں ہوتا ۔ انہوں نے کہا کہ جمہوریت اور وفاقی ڈھانچہ اعتماد اور عزت پر ہی منحصر ہے۔ کسی کے بھی خلاف جانچ کی جا سکتی ہے اور اگر کوئی معاملہ ہے تو جانچ ہونی چاہئے ، لیکن ایسی چیزوں کے بارے میں اقدامات سے پہلے غور کرنا چاہئے۔

غور طلب ہے کہ سی بی آئی کے چھاپے کو لے کر دہلی اور مرکزی حکومتیں آمنے سامنے ہیں۔ کیجریوال اور ان کی پارٹی کا کہنا ہے کہ یہ چھاپے راجندر کمار کے دفتر پر نہیں ، بلکہ کیجریوال کے دفتر پر مارے گئے ہیں۔ کیجریوال نے وزیر اعظم پر سیاسی انتقام کی منشا سے کارروائی کرنے کا الزام لگایا ہے۔

ادھر مرکزی حکومت نے ان الزامات کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ کسی بدعنوان افسر کے خلاف کارروائی سیاسی انتقام کس طرح ہو سکتی ہے؟ ۔

Loading...

Loading...