شیوراج کابینہ کے وزراء پر نکسلیوں کا خوف ، نکسل متاثرہ اضلاع میں نہیں لہرائیں گے ترنگا

مدھیہ پردیش میں نکسلیوں کا خوف جتنا عام لوگوں کے دلوں پر چھایا ہوا ہے، اس سے کہیں زیادہ ریاستی حکومت کے وزراء خوفزدہ نظر آرہے ہیں ۔

Aug 13, 2015 10:24 PM IST | Updated on: Aug 13, 2015 10:24 PM IST
شیوراج کابینہ کے وزراء پر نکسلیوں کا خوف ، نکسل متاثرہ اضلاع میں نہیں لہرائیں گے ترنگا

منڈلا :  مدھیہ پردیش میں نکسلیوں کا خوف جتنا عام لوگوں کے دلوں پر چھایا ہوا ہے، اس سے کہیں زیادہ ریاستی حکومت کے وزراء خوفزدہ نظر آرہے ہیں ۔  عالم یہ ہے کہ وزرا 15 اگست کو یوم آزادی پر نکسل متاثرہ اضلاع میں پرچم کشائی کی تقریب میں شرکت سے گریز کررہے ہیں ۔ یہی نہیں نکسل متاثرہ اضلاع میں خود پرچم لہرانے کی بجائے کلکٹروں کو آگے بڑھا دیا ہے جبکہ خود آبائی اضلاع میں یا پھر دوسرے اضلاع میں پرچم لہرائیں گے ۔ ریاست کے نکسل متاثرہ اضلاع بالاگھاٹ، منڈلا، ڈنڈوری، سنگرولی، سیدھی، شهڈول اور انوپ پور میں کلکٹر ہی پرچم کشائی کریں گے ۔

جھنڈا اونچا رہے ہمارا، وجئی وشو ترنگا پیارا ، اس نعرے کے ساتھ آزادی کی لڑائی لڑی گئی اور ہزاروں لوگوں نے اپنی جانیں نچھاور کیں ، لیکن اس وقت کے رہنماؤں اور اب کے لیڈروں میں کافی فرق ہے ۔ فرق ایسا کہ آج کے لیڈر یوم آزادی پر ہائی الرٹ علاقوں میں جھنڈا لہرانے سے گریز کر رہے ہیں ۔

دراصل نکسلی حملے کے خدشہ نے ریاست کے خفیہ محکمہ کے ساتھ ہی حکومت کے وزراء کو بھی خوفزدہ کردیا ہے ۔ سب سے زیادہ دہشت زدہ وہ وزیر ہیں، جن کے پاس نکسل متاثرہ اضلاع کے چارج ہیں اور 15 اگست کو انہیں پریڈ کی سلامی لے کر وہاں جھنڈا لہرانے کے لئے جانا پڑتا ہے ، لیکن ان وزراء نے اب لال دہشت گردی یعنی نکسل متاثرہ اضلاع میں نہ جانے کا راستہ ڈھونڈ لیا ہے ۔ ان وزراء نے یوم آزادی پر اپنے نکسل متاثرہ چارج والے اضلاع میں پرچم لہرانے کی بجائے آبائی اضلاع یا پھر دوسرے اضلاع میں پرچم کشائی  کا فیصلہ کیا ہے ۔

ان  وزراء میں خزانہ کے وزیر جینت ملیا کا نام سر فہرست ہے ۔ مليا کے پاس ریاست میں سب سے زیادہ نکسل متاثرہ بالاگھاٹ ضلع کا چارج ہے ۔ لہذا بالاگھاٹ کی بجائے جینت مليا نے ہوم ضلع دموہ میں پرچم لہرانے کا فیصلہ کیا ہے ۔

Loading...

اسی طرح اعلی تعلیم کے وزیر اوما شنکر گپتا نکسل متاثرہ شهڈول ضلع کے انچارج ہیں، لیکن اوما شنکر گپتا شهڈول کی بجائے کٹنی جا رہے ہیں ۔ معدنیاتی اور توانائی کے وزیر راجندر شکل سنگرولی کے انچارج وزیر ہیں، لیکن راجندر شکل سنگرولی کی جگہ ہوم ضلع ریوا میں رہیں گے  اور پرچم کشائی کریں گے ۔

صحت اور خاندانی بہبود کے وزیر شرد جین منڈلا اور ڈنڈوری اضلاع کے انچارج ہیں ۔ بالاگھاٹ کے بعد منڈلا اور ڈنڈوری ریاست کا سب سے زیادہ نکسل متاثرہ ضلع ہے، لیکن جین دونوں نکسلی اضلاع کو چھو ڑكر 15 اگست کے دن ترنگا لہرانے اپنے ہوم ضلع جبل پور جائیں گے ۔

ایک اور وزیر گیان سنگھ  نکسل متاثرہ اضلاع سیدھی اور انوپ پور کے انچارج ہیں، لیکن گیان سنگھ یوم آزادی پر دونوں اضلاع کو چھوڑ کر اپنے آبائی ضلع امريا میں پرچم کشائی کی تقریب میں شرکت  کریں گے ۔

فی الحال  ریاستی حکومت نے بھی اپنے وزراء کی سیکورٹی کو ذہن میں رکھتے ہوئے نکسل متاثرہ اضلاع بالاگھاٹ، منڈلا، ڈنڈوری، سیدھی، شهڈول، سنگرولی اور امريا میں کلکٹر کو جھنڈا لہرانے کی ہدایت جاری کر دی ہے ۔

Loading...