ہوم » نیوز » No Category

لاک ڈاؤن میں جنسی کھلونے کی بڑھی مانگ، سوشل ڈسٹینسنگ میں لوگوں میں نظر آرہی ہے یہ بڑی تبدیلی

گھروں میں بند ہونے کی وجہ سے کنڈوم ، مانع حمل گولیوں (پلس)، سیکس ٹوائز (Sex Toys) جنسی کھلونے کی مانگ میں بہت زیادہ اضافہ ہوا ہے۔ اس سے سیکسوئل ویلینیس انڈسٹری (Sexual wellness industry ) کی آمدنی میں 24-28 فیصد اضافہ نظر آیا ہے۔

  • Share this:
لاک ڈاؤن میں جنسی کھلونے کی بڑھی مانگ، سوشل ڈسٹینسنگ میں لوگوں میں نظر آرہی ہے یہ بڑی تبدیلی
گھروں میں بند ہونے کی وجہ سے کنڈوم ، مانع حمل گولیوں (پلس)، سیکس ٹوائز (Sex Toys) جنسی کھلونے کی مانگ میں بہت زیادہ اضافہ ہوا ہے۔ اس سے سیکسوئل ویلینیس انڈسٹری (Sexual wellness industry ) کی آمدنی میں 24-28 فیصد اضافہ نظر آیا ہے۔

کورونا وائرس وبا (Covid-19 pandemic) کے پھیلاؤ کو روکنے کیلئے گھر سے کام (Work from home)، سماجی دوری (social distancing) اور لاک ڈاؤن (Lockdown) کو نافذ کیا گیا ہے۔ ایسی صورتحال میں زیادہ تر لوگ گھروں میں بند ہیں۔ گھروں میں بند ہونے کی وجہ سے کنڈوم ، مانع حمل گولیوں (پلس)، سیکس ٹوائز (Sex Toys) جنسی کھلونے کی مانگ میں بہت زیادہ اضافہ ہوا ہے۔ اس سے سیکسوئل ویلینیس انڈسٹری (Sexual wellness industry ) کی آمدنی میں 24-28 فیصد اضافہ نظر آیا ہے۔


آپ کوبتادیں کہ پوری طرح سے سیکسوئل ویلنیس پر مرکوز کچھ ویب سائٹس کا ٹریفک دوگنا ہوگیا ہے۔ فرسٹ پوسٹ کی خبر کے مطابق ، ایک اہم ای کامرس سائٹ کے ذرائع نے بتایا ہے کہ کنڈوم اور مانع حمل گولیوں کی آن لائن فروخت میں بھی نمایاں اضافہ ہوا ہے۔ وہیں سیکسوئل ویلینیس کے تحت ایڈلٹ سیکس کھلونے(Sex Toys) کی مانگ میں بھی کفی اضافہ ہوا ہے۔ اس طرح کی مصنوعات بیچنے والی کمپنی کی ویب سائٹ پر سب سے زیادہ سرچ کی جانے والی مصنوعات میں بٹ پلگس ، اینل لیوز ، آئی ماسک ، تھرسٹ وائبس ، لووینش لش اور فلیش لائٹ شامل ہیں۔


آن لائن سرچ اور خریداری میں اضافہ۔۔


رپورٹ کے مطابق IMBesharam کے شریک بانی راج ارمانی مانتے ہیں کہ آن لائن سر اورخریداری میں اضافے کا سیدھا تعق لوگوں کے گھروں میں رہنا شروع کرنے ریگولر سرگرمیوں (Regular activities) سے دور رہنے سے ہے۔ اس دوران لوگ کچھ نئے اور کریئٹو متباد کی تلاش کررہے ہیں۔ لاک ڈاؤن کے دوران کمپنی نے 3,960 سے زیادہ آرڈر کی ڈلیوری بھیجی ہے۔ زیادہ تر ڈلیوری بنگلورو، دہلی اور ممبئی کے رہنے والوں کو کی گئی ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ اس دوران ایک آرڈر تقیبا 5,865 روپئے کا تھا۔

دیٹس پرسنل ڈاٹ کام کے چیف مارکیٹنگ آفیسر ونیش کمار کنہی رمن نے کہاکہ ہندوستان میں کورونا وائرس کے نئے معاملے بڑھنے کی خبروں کے بعد سے بکری میں اضافہ کا رجحان نظر آیا ہے۔ گھر سے کام (Work from home) لازم کئے جانے کے کافی پہلے سے ہی کئی کمپنیوں نےخود ہی(Work from home) کا فیصلہ لیا تھا۔ اس کے بعد خریداروں نے دکانوں پر جانے کے بجائے آن لائن مصنوعات کی تلاش شروع کردی۔ نیٹ فلکس لاسٹ اسٹوریز کے وائرل ہونے کے بعد Sexual wellness industry کی فروخت میں اچانک اضافہ ہوا ہے۔

خواتین کے لئے 40 فیصد Sex Toys
خواتین کے جنسی کھلونوں (Sex Toys) کی آن لائن تلاش میں 54 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ سب سے زیادہ مانگ مساج کرنے والی اشیا(massagers) اور masturbators کی ہورہی ہے۔ گھر سے کام Work from home کررہے لوگوں میں (Sex Toys) جنسی کھلونے کی بکری 1،500 - 2500 روپے کی رینج میں ہوئی ہے۔ اس مدت کے دوران آرڈر میں بھی 8 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔ ارمانی نے بتایا کہ آن لائن سائٹ مردوں کے لئے 60 فیصد (Sex Toys) اور خواتین کے لئے 40 فیصد (Sex Toys) بیچتی ہے ۔.Lovense Lush کے (Sex Toys) سائٹ پر 22،999 روپے میں دستیاب ہیں۔
First published: Apr 23, 2020 04:52 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading