سری نگر میں دو مواصلاتی کمپنیوں کے دفاتر پر گرینیڈ حملے

سری نگر : سری نگر میں جمعہ کے روز نامعلوم بندوق برداروں نے دو مواصلاتی کمپنیوں کے دفاتر کی طرف دو دستی بم پھینکے۔

Jul 24, 2015 01:27 PM IST | Updated on: Jul 24, 2015 01:30 PM IST
سری نگر میں دو مواصلاتی کمپنیوں کے دفاتر پر گرینیڈ حملے

سری نگر :  سری نگر میں جمعہ کے روز نامعلوم بندوق برداروں نے دو مواصلاتی کمپنیوں کے دفاتر کی طرف دو دستی بم پھینکے۔ تاہم دستی بم پھینکنے کے اِن واقعات میں کسی جانی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ملی ہے۔ قابل ذکر ہے کہ مئی کے اواخر میں شمالی کشمیر میں مواصلاتی شعبے سے جڑے افراد پر پے در پے حملے کئے گئے جن میں دو افراد ہلاک جبکہ تین دیگر زخمی ہوگئے تھے۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ سری نگر کے کرن نگر علاقے جو سری نگر ڈسٹرک پولیس لائنز سے محض آدھا کلو میٹر کی دوری پر واقع ہے، میں بندوق بردار دو مواصلاتی دفاتر میں داخل ہوئے اور ملازمین و گاہکوں کو باہر نکلنے کیلئے کہا۔ انہوں نے کہا کہ اس کے بعد اِن دفاتر میں دھماکوں کی آواز سنی گئی جس کے نتیجے میں بڑے پیمانے پر مالی نقصان ہوا ہے۔ گرینیڈ دھماکوں کی وجہ سے نذدیکی دکانوں کے شیشے چکنا چور ہوئے ہیں۔  اسی طرح ننون پہلگام بیس کیمپ سے بھی یاتریوں کا تازہ قافلہ پوتر گھپا کی درشن کیلئے روانہ ہوا ہے۔ دریں اثنا امرناتھ یاترا پر آنے والے ایک اور یاتری کی موت واقع ہوئی ہے جس کے ساتھ ہی جاری یاترا کے دوران مرنے والے یاتریوں کی تعداد بڑھ کر 29 ہوگئی ہے۔ یاترا کنٹرول روم کے ایک افسر نے بتایا کہ 66 سالہ رمیش سنگھ ودیا ولد بہال سنگھ ودیا ساکن ایم او روڑ مدھیہ پردیش کو پوتر گھپا کے نذدیک دل کا شدید دورہ پڑا۔ انہیں فوری طور پر میڈیکل کیمپ منتقل کیا گیا جہاں اسے مردہ قرار دے دیا گیا۔

Loading...

Loading...