ہندو طالبات نے اردو میں تو مسلم طالبات نے سنسکرت میں کیا ٹاپ

اعظم گڑھ : اتر پردیش حکومت کی اہم اسکیم کنیا وديادھن کے تحت 4 طالبات کو ضلع مجسٹریٹ نے اعزاز سے نوازا۔ ان میں سے دو مسلم طالبات ہیں ، جنہوں نے سنسکرت میں ٹاپ کیا ہے تو دو ہندو طالبات ہیں ، جنہوں نے اردو میں ٹاپ کیا ہے ۔

Jan 06, 2016 08:13 PM IST | Updated on: Jan 06, 2016 08:14 PM IST
ہندو طالبات نے اردو میں تو مسلم طالبات نے سنسکرت میں کیا ٹاپ

اعظم گڑھ : اتر پردیش حکومت کی اہم اسکیم کنیا وديادھن کے تحت 4 طالبات کو ضلع مجسٹریٹ نے اعزاز سے نوازا۔ ان میں سے دو مسلم طالبات ہیں ، جنہوں نے سنسکرت میں ٹاپ کیا ہے تو دو ہندو طالبات ہیں ، جنہوں نے اردو میں ٹاپ کیا ہے ۔

اعظم گڑھ ضلع کے ضلع مجسٹریٹ آفس کے آڈیٹوریم میں ریاستی حکومت کی کنیا وديادھن اسکیم کے تحت یوپی، سنسکرت، مدرسہ، سی بی ایس ای اور آئی سی ایس سی بورڈ کے تحت ضلع میں ٹاپ 4 طالبات کی ضلع مجسٹریٹ توصیفی سند اور 30 -30 ہزار روپےکی رقم دے کر حوصلہ افزائی کی۔

اس میں سے دو طالبات ستارہ خاتون اور کہکشاں خاتون نے سنسکرت کالج میں پڑھ کر سنسکرت میں ضلع میں ٹاپ کیا ہے جبکہ کماری منیشا اور ارميلا نے مدرسے میں پڑھ کر اردو میں ٹاپ کیا ہے۔ اس موقع پر ضلع مجسٹریٹ نے کہا کہ حکومت کی اس اسکیم سے طلبہ و طالبات کے مستقبل کی تعلیم آسان ہو جائے گی۔

ادھر جہاں ایوارڈ سے نوازے جانے والی طالبات نے حکومت کی اس اسکیم بندی کی تعریف کی ، وہیں اسکول کے اساتذہ نے کہا کہ ان طالبات نے ثابت کر دیا ہے کہ کوئی بھی زبان اور کوئی بھی ثقافت کسی ایک قوم کی نہیں ہوتی۔

Loading...

Loading...