وقف بورڈ کر رہا ہے مافیاوں کی سرپرستی: مولانا جواد

لکھنؤ : شیعہ مذہبی رہنما مولانا کلب جواد نے زمینی رنجش میں کئے گئے اسکول کے پرنسپل کے قتل کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ وقف بورڈ مافیاوں کی سرپرستی کر رہا ہے ۔

Aug 12, 2015 11:32 PM IST | Updated on: Aug 12, 2015 11:32 PM IST
وقف بورڈ کر رہا ہے مافیاوں کی سرپرستی: مولانا جواد

لکھنؤ  :  شیعہ مذہبی رہنما مولانا کلب جواد نے زمینی رنجش میں کئے گئے اسکول کے پرنسپل کے قتل کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ وقف بورڈ مافیاوں کی سرپرستی کر رہا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ اگر وقف بورڈ نے پہلے ہی غیر قانونی قبضوں کے خلاف کارروائی کی ہوتی اور مافیاوں پر شکنجہ کسا ہوتا اور سختی برتی ہوتی تو آج یہ نوبت نہیں آتی ۔  مولانا کلب جواد نے بدھ کی صبح نقوی امام باڑہ ناظم صاحب کے مقتول متولی تقی رضا کے اہل خانہ سے ملاقات کی اور انہیں تعزیت پیش کی اور تقی  رضا کے لئے فاتحہ خوانی بھی کی ۔ اس دوران انہوں نے کہا کہ اگر وقف بورڈ کا یہی حال رہا اور مافیاوں کی سرپرستی نہیں رکی تو آئندہ بھی قتل کے ایسے واقعات پیش آنے کا اندیشہ ہے۔

مولانا نے کہا کہ اتر پردیش میں جنگل راج ہے، انتظامیہ اپنی ذمہ داری کو سمجھے اور مافیاؤں کے خلاف سخت کارروائی کرے ۔ علاوہ ازیں علماء کمیٹی نے مطالبہ کیا کہ مافیا کی سرپرستی  ختم کی جائے اور جو لوگ مافیاوں کی سرپرستی اور قیادت کر رہے ہیں ان کی بھی جانچ ہونی چاہئے ۔

اس کے علاوہ مولانا نے بے گناہ جوانوں کو گرفتار اور ریمانڈ پر لئے جانے کی سخت مذمت کرتے ہوئے کہا کہ پولیس نے جن 6 افراد کو گرفتار کر کے جیل بھیجا ہے اور ریمانڈ پر لیا ہے ہم اس کی سخت مذمت کرتے ہیں ۔

Loading...

انہوں نے کہا کہ گلشن عباس سے پولیس نے سادہ کاغذ پر زبردستی ڈرا دھمکا کر دستخط لئے ہیں اور ریوالور برآمد دکھایا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم پولیس کے اس رویہ کی سخت مذمت کرتے ہیں ۔ گلشن عباس کو پھنسانے کی سازش کی جا رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس سے سادہ کاغذ پر ڈرا دھمکا کر کیوں دستخط لیا گیا ہے ، اس کی جانچ کی جانی چاہئے ۔

Loading...