உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Orange Alert: اتراکھنڈ میں بھاری بارش اور برفباری کا خطرہ، بگڑ گیا انتخابی تشہیر کا حساب

    Uttarakhand Weather :موسمی حالات کے بارے میں بتاتے ہوئے زونل میٹرولوجیکل سینٹر کے وکرم سنگھ نے کہا کہ 3 اور 4 تاریخ کو پوری ریاست میں ہلکی سے درمیانی بارش ہوگی اور 2500 میٹر سے اوپر والے علاقوں میں برف باری ہوگی۔

    Uttarakhand Weather :موسمی حالات کے بارے میں بتاتے ہوئے زونل میٹرولوجیکل سینٹر کے وکرم سنگھ نے کہا کہ 3 اور 4 تاریخ کو پوری ریاست میں ہلکی سے درمیانی بارش ہوگی اور 2500 میٹر سے اوپر والے علاقوں میں برف باری ہوگی۔

    Uttarakhand Weather :موسمی حالات کے بارے میں بتاتے ہوئے زونل میٹرولوجیکل سینٹر کے وکرم سنگھ نے کہا کہ 3 اور 4 تاریخ کو پوری ریاست میں ہلکی سے درمیانی بارش ہوگی اور 2500 میٹر سے اوپر والے علاقوں میں برف باری ہوگی۔

    • Share this:
      Weather Alert ! دہرادون: محکمہ موسمیات نے اتراکھنڈ کے کچھ علاقوں میں بارش اور اونچائی والے علاقوں میں برفباری کی وارننگ جاری کی تو ریاست میں انتخابی مہم سے جڑی تمام سیاسی جماعتوں کا حساب ہی گڑبڑا گیا۔ اگلے چار دن یعنی اس پورے ہفتے تک اس طرح کا موسم برقرار رہ سکتا ہے لیکن 4 فروری تک کیلئے خصوصی اورہنج الرٹ Orange Alert جاری کر دیا گیا ہے۔ کچھ حصوں میں موسلادھار بہت تیز بارش بھی ہو سکتی ہے۔ بی جے پی صدر جے پی نڈا جمعرات کو اترکاشی کا دورہ کرنے والے تھے، جسے پارٹی نے خراب موسم کی وجہ سے رد کر دیا ہے۔

      موسمی حالات کے بارے میں بتاتے ہوئے زونل میٹرولوجیکل سینٹر کے وکرم سنگھ نے کہا کہ 3 اور 4 تاریخ کو پوری ریاست میں ہلکی سے درمیانی بارش ہوگی اور 2500 میٹر سے اوپر والے علاقوں میں برف باری ہوگی۔ محکمہ موسمیات کے مطابق ایک نئے اور سرگرم ویسٹرن ڈسٹربنس کی وجہ سے اتراکھنڈ اور ہماچل کے موسم میں ایسی تبدیلی دیکھنے کو ملے گی۔ بارش جمعہ تک جاری رہ سکتی ہے۔ دہرادون میں جمعرات کی صبح سے ہی بادل چھائے ہوئے تھے اور وقفے وقفے سے بارش ہوتی رہی۔ انتخابی موسم میں بے موسمی بارش کی وجہ سے کئی مسائل و دقت  پیش آرہے ہیں۔

      جے پی نڈا کا دورہ رد
      دہرادون سے پرینکا گاندھی کی ورچوئل ریلی کا پروگرام بدھ کو ختم ہوا لیکن جمعرات کو بی جے پی صدر جے پی نڈا کا اترکاشی کا اہم دورہ موسم کی وجہ سے خراب ہو گیا۔ موسم نے بی جے پی اور کانگریس سمیت تمام پارٹیوں کے لیے مشکلات پیدا کر دی ہیں۔ چونکہ ووٹنگ 14 فروری کو ہونے والی ہے، اس لیے صرف 10 دن رہ گئے ہیں۔ ایسے میں کورونا انفیکشن کی وجہ سے پہلے ہی تشہیری پابندیاں ہیں اور اب موسم کی مار بھی نظر آنے لگی ہے۔

      چونکہ اتراکھنڈ کی 70 اسمبلی سیٹوں میں سے 39 سیٹیں پہاڑی علاقوں میں ہیں، اس لیے ظاہر ہے کہ بارش اور برف باری کی وجہ سے یہاں انتخابی مہم میں کافی پریشانی کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: