உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پاکستان کے دہشت گردوں کی فہرست میں ممبئی حملے کے ماسٹرمائنڈ کا نام نہیں، ہندستان نے ظاہر کی ناراضگی

    ہندستان نے پاکستان کے اس طرز عمل پر برہمی کا اظہار کیا ہے۔

    ہندستان نے پاکستان کے اس طرز عمل پر برہمی کا اظہار کیا ہے۔

    پاکستان (Pakistan) نے جمعرات کو 1,210 موسٹ وانٹیڈ دہشت گرد کی فہرست جاری کی ہے۔ اس فہرست میں ممبئی دہشت گرد حملے میں ملوث دہشت گرد بھی شامل ہیں۔ لیکن حملے کے ماسٹر مائنڈ کا نام اس فہرست سے خارج ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: پاکستان (Pakistan) نے جمعرات کو 1,210 موسٹ وانٹیڈ دہشت گرد کی فہرست جاری کی ہے۔ اس فہرست میں ممبئی دہشت گرد حملے میں ملوث دہشت گرد بھی شامل ہیں۔ لیکن حملے کے ماسٹر مائنڈ کا نام اس فہرست سے خارج ہے۔ ہندستان نے پاکستان کے اس طرز عمل پر برہمی کا اظہار کیا ہے۔ ہندوستان نے الزام لگایا ہے کہ پاکستان نے ممبئی دہشت گردانہ حملے کے ماسٹر مائنڈز اور اہم سازش کاروں کے ناموں کو 'کھلے عام'چھوڑ دیاہے۔
      وزارت خارجہ ناراض
      ہندوستانی وزارت خارجہ کے ترجمان انوراگ شریواستو نے اس پر سخت رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ، 'اس فہرست میں لشکر طیبہ کے کچھ دہشت گردوں کے نام ہیں۔ اس میں ممبئی حملوں میں استعمال ہونے والی کشتیوں کے عملے کے ممبروں کا بھی نام ہے ، لیکن اس فہرست سے ماسٹر مائنڈ اور اس حملے کے اہم سازش کاروں کا نام غائب ہے۔ اس فہرست سے ظاہر ہوتا ہے کہ ممبئی حملے کے تمام ثبوت ان کے پاس موجود ہیں۔

      اس فہرست میں کیا ہے؟
      یہ فہرست سنگھی جانچ ایجنسی (ایف آئی اے) کے انسداد دہشت گردی یونٹ (Anti Terrorism Unit) نے جاری کی ہے۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ اس فہرست میں لندن میں مقیم متحدہ قومی موومنٹ (اے ایم کیو ایم) کے لیڈر الطاف حسین اور پاکستان مسلم لیگ (ن) کے کارکن ناصر بٹ کا نام بھی ہے۔ پی ٹی آئی نے یہ فہرست دیکھی ہے جس میں 2008 کے ممبئی حملے میں ملوث افراد کے نام اور پتے بھی ہیں۔ اس فہرست میں دہشت گرد کا نام ، والد کا نام اور آخری معلوم پتہ شامل ہے۔ نیز ، اگر کسی انعام کا اعلان کیا گیا ہے ، تو اس کی بھی جانکاری ہے۔

      ممبئی دہشت گرد حملے سے جڑے نام
      اس میں شامل پہلے 19 نام کسی نہ کسی طرح ممبئی دہشت گردانہ حملے سے وابستہ ہیں۔ پہلا نام امجدخان کا ہے۔ وہ لشکر طیبہ کا سابق ​​ممبر ہے۔ اس نے الفوز کشتی خریدی جو ممبئی حملے کے دوران استعمال ہوئی تھی۔ دوسرا نام افتخار علی ہے۔ اس کی شناخت لشکر کے سابق ممبر کے طور پر ہوئی ہے۔ اس فہرست میں سابق صدر پرویز مشرف اور وزیر اعظم شوکت عزیز پر حملے کے مشتبہ کے نام بھی شامل ہیں۔ (بھاشا ان پٹ کے ساتھ)
      Published by:sana Naeem
      First published: