باغپت میں کہا سنی کے بعد پولیس اہلکار نے نوجوان کو ماری گولی

باغپت۔ اتر پردیش کے باغپت شہر کوتوالی علاقے میں معمولی بات پر جھگڑا کے بعد کمرے میں بھیڑ کے ساتھ گئے نوجوان کو پولیس اہلکار نے گولی مار دی جس سے اس کی موت ہو گئی۔

Apr 28, 2016 12:13 PM IST | Updated on: Apr 28, 2016 12:15 PM IST
باغپت میں کہا سنی کے بعد پولیس اہلکار نے نوجوان کو ماری گولی

باغپت۔  اتر پردیش کے باغپت شہر کوتوالی علاقے میں معمولی بات پر جھگڑا کے بعد کمرے میں بھیڑ کے ساتھ گئے نوجوان کو پولیس اہلکار نے گولی مار دی جس سے اس کی موت ہو گئی۔ پولیس ذرائع نے آج یہاں بتایا کہ کل رات باغپت کوتوالی علاقے میں سوات ٹیم میں تعینات کانسٹیبل رگھوویر اور اس کے ساتھیوں کے ساتھ سڑک پر کھڑے فرید (20) کی کسی بات پر کہا سنی ہو گئی تھی۔ چند لوگوں نے بیچ بچاؤ کرکے معاملہ ٹھنڈا کرا دیا تھا۔

رات کو تقریباََ ساڑھے دس بجے فرید تقریبا 50 لوگوں کو لے کر کرایہ کے مکان میں رہ رہے کانسٹیبل رگھوویر کے گھر جا پہنچا اور اس کے ساتھ کہا سنی ہو گئی اور بھیڑ نے اس کے ساتھ مارپیٹ کی کوشش کی۔ اپنے دفاع میں رگھوویر نے گولی چلادی جس سے فرید زخمی ہو گیا زخمی فرید کو اسپتال لے جایا گیا جہاں اس کی موت ہو گئی۔

واقعہ کے بعد ملزم پولیس اہلکار فرار ہوگیا۔ اس سلسلہ میں کانسٹیبل کے چار ساتھیوں کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ پولیس فرار کانسٹیبل کو تلاش کر رہی ہے۔

Loading...

Loading...