ریئل لائف کی بجرنگی بھائی جان کی کہانی میں کون ہے گیتا؟ كوكيا، پوجا ، یا پھر سویتا

بالی وڈ فلم بجرنگی بھائي جان کی کہانی سے ملتی جلتی ہے اصلی زندگی میں گیتا کی کہانی ۔

Aug 07, 2015 11:41 AM IST | Updated on: Aug 07, 2015 11:41 AM IST
ریئل لائف کی بجرنگی بھائی جان کی کہانی میں کون ہے گیتا؟  كوكيا، پوجا ، یا پھر سویتا

الہ آباد :  بالی وڈ فلم بجرنگی بھائي جان کی کہانی سے ملتی جلتی ہے اصلی زندگی میں گیتا کی کہانی ۔ بچپن میں غلطی سے پاکستان چلی جانے والی قوت گویائی اورقوت سماعت سے محروم گیتا کی زندگی میں اچانک سے کئی ماں باپ کے سامنے آ گئے ہیں ۔ اب پرتاپ گڑھ کی ایک فیملی نے گیتا کے اپنی بیٹی ہونے کا دعوی کیا ہے ۔

اس فیملی نے کہا ہے کہ اس کا اصلی نام گیتا نہیں بلکہ سویتا ہے جو بہار کے چھپرا ضلع سے غائب ہوئی تھی ۔ یہ پہلا خاندان نہیں ہے جو سرخیوں میں آئی گیتا کو اپنی بیٹی کو بتا رہا ہے ۔ بلکہ گیتا کی کہانی بھی فلم بجرنگی بھائی جان کی طرح ہی چل رہی ہے ،  اس کی مدد کے لئے چندی گڑھ کی ایک خاتون آگے آئی تھی، لیکن اب گیتا پر ایک خاندان نہیں بلکہ تین خاندان دعوی کر رہے ہیں ۔

گیتا جو پہلے ہی فیملی کے لئے ترس رہی تھی ، وہیں اب تین ایسی فیملی سامنے آئی ہیں جو گیتا کو اپنی بیٹی بتا رہی ہیں ۔

پہلا خان جو گیتا کو اپنی بیٹی کو بتا رہا ہے وہ بوکارو ضلع کے رہنے والے ہیں ۔ ناواڈيه ڈویژن کے راجاٹانڈ کے رہائشی بھلو مہتو اور بچنی دیوی کی تقریبا ایک دہائی قبل لاپتہ ہوئی گونگی بیٹی كوكيا کی شکل پاکستان میں رہ رہی گیتا سے ملتی ہے ۔ ان کا کہنا ہے کہ ان کی بیٹی جب لاپتہ ہوئی تھی، اس وقت اس کی عمر تقریبا 10-12 سال تھی ، اس کی ماں بچنی دیوی نے بتایا کہ ایک دن كوكيا بکری چرانے کئلیے گھر سے نکلی تھی، اس کے بعد واپس نہیں لوٹی ۔ تقریبا دو سالوں تک تلاش کرنے کے بعد كوكيا کا کچھ پتہ نہیں چلا تو اہل خانہ نے اس کی تلاش چھوڑ دی ۔

Loading...

كوكيا کے دو بھائی اور چار بہن ہیں ۔ غور طلب ہے کہ عیدی تنظیم کے منتظمین نے بتایا ہے کہ گیتا بھی سات بھائی بہن ہونے کی بات کرتی ہے ۔ كوكيا کی گیتا سے ملتی جلتی شکل و تقریبا ایک دہائی قبل اس کے غائب ہونے کی وجہ سے لگتا ہے کہ كوكيا ہی کہیں گیتا تو نہیں ۔

گیتا کو اپنی فیملی کا رکن بتانے والوں میں بوکارو کے بھلو مہتو اور بچنی دیوی اکیلے نہیں ہیں بلکہ امرتسر کے کوڑا بيننے والے خاندان کا دعوی ہے کہ گیتا ہی ان کی بیٹی ہوجا ہے ۔  امرتسر کی جھگی جھونپڑی میں رہنے والے ایک گونگےبہرے جوڑے نے دعوی کیا ہے کہ وہ ان کی بیٹی پوجا ہے ، یہ خاندان ريگو برج کے پاس رہتا ہے ۔ ان کے پاس  تین لڑکے اور دو لڑکیاں ہیں ، بیٹے راجو نے بتایا کہ ماں باپ کوڑا بيننے اور ہم بھائی بہن بھیک مانگنے کا کام کرتے ہیں ، پوجا بھی بھیک مانگا کرتی تھی ، اسی دوران شاید اسٹیشن کے ذریعے اٹاری بارڈر پہنچی اور سرحد پار چلی گئی ۔  ان کا کہنا ہے کہ انہوں نے جب ٹی وی پر گیتا کی تصویر دیکھی تو لگا کہ وہ پوجا ہے ۔ یہ خاندان بہار کا ہے ۔ 25 سال پہلے روزی روٹی کی تلاش میں امرتسر آیا تھا ۔

Loading...