الہ آباد یونیورسٹی سینٹرل لائبریری کی اردو کتابیں جلد ہوں گی آن لائن

اردو کی سب سے بڑی اور مقبول ویب سائٹ ریختہ نے الہ آباد یونیورسٹی لائبریری میں محفوظ قدیم اور نایاب اردو کتابوں کو ڈیجیٹلائز کرنے کا کام شروع کردیا ہے

Sep 08, 2016 04:00 PM IST | Updated on: Sep 08, 2016 04:00 PM IST
الہ آباد یونیورسٹی سینٹرل لائبریری کی اردو کتابیں جلد ہوں گی آن لائن

الہ آباد : اردو کی سب سے بڑی اور مقبول ویب سائٹ ریختہ نے الہ آباد یونیورسٹی لائبریری میں محفوظ قدیم اور نایاب اردو کتابوں کو ڈیجیٹلائز کرنے کا کام شروع کردیا ہے ۔اس کے علاوہ ریختہ نے ہندوستانی اکیڈمی ، انڈین پریس اور پروفیسر شمس الرحمان فاروقی کی ذاتی لائبریری کے ڈیجیٹلائزیشن کا بھی منصوبہ بنایا ہے ۔ ریختہ کے اس قدم سے آن لائن نایاب کتابوں کی ذخیرے میں بڑا اضافہ ہونے جا رہا ہے ۔

مشرق کا آکسفورڈ کہی جانے والی الہ آباد یونیورسٹی کی سینٹرل لائبریری تقریباً ڈیڑھ سو برس قدیم ہے ۔ لائبریری میں تیس ہزار سے بھی زائد اردو، فارسی اورعربی کتابوں کا نہایت قیمتی ذخیرہ موجود ہے ۔ آن لائن اردو کتابوں کی ویب سائٹ ریختہ نے الہ آباد یونیورسٹی میں موجود قدیم اردو کتابوں کے ڈیجیٹلائزیشن کا کام شروع کر دیا ہے ۔ منصوبہ کے نگراں زمرد مغل کا کہنا ہے کہ ریختہ قدیم علمی ذخیرے کو محفوظ کرکے نئی نسل تک پہنچانا چاہتی ہے ۔

ریختہ کی ٹیم الہ آباد میں تقریباً دو ماہ تک قیام کرے گی ۔ اس دوران ریختہ سے وابستہ کارکنان شہر کے مختلف کتب خانوں اورذاتی لائبریریوں کا پتہ لگا کرعلمی اہمیت کی حامل جو قدیم کتابیں ملیں گی ، ان کو آن لائن کریں گے ۔ ریختہ کی اس مہم کے ساتھ یونیورسٹی انتظامیہ نے بھی بھر پور تعاون کا فیصلہ کیا ہے ۔

ریختہ فاؤنڈیشن کا کہنا ہے کہ جلد ہی ایک لاکھ کتابوں کوآن لائن کر دیا جائے گا۔ وہ اردو کے قدیم علمی سرمایہ کو نئی نسل کے لئے محفوظ کرنا چاہتے ہیں ۔ان کا کہنا ہے کہ اس مشن کے لئے اردو داں افراد سے تعا ون بھی در کار ہے ۔

Loading...

Loading...