بی جے پی لیڈر تیوتیا پرجان لیوا حملہ کرنے والے بدمعاشوں کی تلاش جاری ، نہیں ملا اب تک کوئی سراغ

اترپردیش میں غازی آباد کے مراد نگر علاقے میں کل دیر شام بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) لیڈر برج پال تیوریا پر جان لیوا حملہ کرنے والے بدمعاشوں کو پولیس سرگرمی سے تلاش کر رہی ہے لیکن ابھی تک بدمعاشوں کا کوئی سراغ نہیں ملا ہے۔

Aug 12, 2016 11:44 AM IST | Updated on: Aug 12, 2016 11:44 AM IST
بی جے پی لیڈر تیوتیا پرجان لیوا حملہ کرنے والے بدمعاشوں کی تلاش جاری ، نہیں ملا اب تک کوئی سراغ

غازی آباد : اترپردیش میں غازی آباد کے مراد نگر علاقے میں کل دیر شام بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) لیڈر برج پال تیوریا پر جان لیوا حملہ کرنے والے بدمعاشوں کو پولیس سرگرمی سے تلاش کر رہی ہے لیکن ابھی تک بدمعاشوں کا کوئی سراغ نہیں ملا ہے۔ اس حملے میں مسٹر تیوریا سمیت چھ افراد زخمی ہو گئے تھے۔

پولیس ذرائع نے آج یہاں بتایا کہ بدمعاشوں نے مسٹر تیوریا پر اے کے 47 سے حملہ کیا۔ واقعہ کے بعد بدمعاش ہتھیاروں سے بھرا بیگ مودي نگر علاقے میں پھینک کر فرار ہوگئےجس میں ایک اے کے 47 اور دو پستول کے علاوہ بڑی تعداد میں کارتوس ملے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ پولیس بدمعاشوں کی تلاش کر رہی ہے۔

غور طلب ہے کہ رات تقریبا آٹھ بجے مسٹر تیوریا اپنے باڈی گارڈوں اور چار ساتھیوں کے ساتھ مراد نگر سے كوی نگر غازی آباد اپنی گاڑی سے آ رہے تھے۔ راولي کے راستے پر رات تقریبا آٹھ بجے ٹیلی فون ایکسچینج کے قریب ایک دوسری گاڑی پر سوار بدمعاشوں نے ان کی کار پر خود کار ہتھیاروں سے فائرنگ شروع کر دی۔

اس واقعہ میں مسٹر تیوریا کے علاوہ رام پال، اشوک سنگھ، محکم سنگھ، اندرپال اور وپن سنگھ زخمی ہو گئے۔ تمام زخمیوں کو سروودیہ ہسپتال میں داخل کرایا گیا لیکنمسٹر تیوریا اور ان کے ایک ساتھی کی حالت نازک ہونے پر انہیں نوئیڈا کے فورٹس ہسپتال میں داخل کرایا گیا جہاں ان کی حالت اب بھی نازک ہے۔ مسٹر تیوریا وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ کے قریبی ہیں۔

Loading...

Loading...