اعظم خان کا مودی پر پھر نشانہ ، کہا : گجرات فسادات اور دادری سانحہ پر بھی ہونا چاہئے تھا جذباتی

رام پور: اتر پردیش کے شہری ترقی کے وزیر اعظم خاں نے وزیر اعظم مودی پر ایک مرتبہ پھر نشانہ سادھا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ویملا کی موت پر جذباتی ہونا بہت اچھی بات ہے، لیکن مودی کو ایسے تمام مواقع پر جذباتی ہو جانا چاہئے۔

Jan 24, 2016 07:29 PM IST | Updated on: Jan 24, 2016 07:29 PM IST
اعظم خان کا مودی پر پھر نشانہ ، کہا : گجرات فسادات اور دادری سانحہ پر بھی ہونا چاہئے تھا جذباتی

رام پور: اتر پردیش کے شہری ترقی کے وزیر اعظم خاں نے وزیر اعظم مودی پر ایک مرتبہ پھر نشانہ سادھا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ویملا کی موت پر جذباتی ہونا بہت اچھی بات ہے، لیکن مودی کو ایسے تمام مواقع پر جذباتی ہو جانا چاہئے۔

سماج وادی پارٹی کے قدآور لیڈر نے رام پور میں میڈیا سے بات چیت میں یہ بات کہی۔ وزیر اعظم مودی کے لکھنؤ میں ایک پروگرام کے دوران دلت طالب علم روہت ویملا کی موت پر جذباتی ہونے پر اعظم نے کہا کہ بہت اچھی بات ہے، لیکن مودی کو ایسے تمام مواقع پر جذباتی ہو جانا چاہئے۔

کابینی وزیر نے کہا کہ مودی کو گجرات معاملے پر بھی جذباتی ہو جانا چاہئے تھا، مظفرنگر فسادات پر بھی جذباتی ہونا چاہیے تھا، دادری سانحہ پر بھی جذباتی ہونا چاہئے، جذباتیت کا معیار ایک ہونا چاہئے، اس میں فرق نہیں ہونا چاہئے۔

اعظم خاں سے جب راہل گاندھی کے بندیل کھنڈ دورے کو لے کر سوال کیا گیا تو ان کا کہنا تھا کہ پتہ نہیں کیوں، لیکن راہل کو ملک سنجیدگی سے نہیں لیتا ہے۔ وہ بہت اچھل کود کر رہے ہیں، جس سے کافی تھک بھی جاتے ہوں گے۔ وہ اپنے ساتھ ٹافیاں لے جایا کریں۔ وہ ٹافی خود بھی چوسا کریں اور بچوں کو بھی چسايا کریں۔

Loading...

حیدرآباد میں دلت طالب علم روہت ویملا کی موت کے معاملے میں اعظم خان نے کہا کہ جس طرح سے موت ہوئی ہے، اس سے پورا ملک پریشان ہے۔ پیغام یہ جا رہا ہے کہ یہ خود کشی نہیں بلکہ قتل ہے۔ انہوں نے کہا کہ کسی کو مرنے کے لئے اكسانا اور ایسے حالات سے گزارنا کہ مرنے کے لئے مجبور ہو جائے ، تو جن لوگوں نے یہ حالات پیدا کئے ہیں، وہ سبھی گناہگار ہیں۔

Loading...