سرجیکل اسٹرائیک پر ثبوت مانگنے والوں کی حب الوطنی مشکوک: بی جے پی ممبراسمبلی

ی جے پی ممبراسمبلی سریندر سنگھ نے سرجیکل اسٹرائیک کا ثبوت مانگنے والی اپوزیشن جماعتوں کے لیڈران پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا کہ سرجیکل اسٹرائیک پر ثبوت مانگنے والوں کی حب الوطنی مشکوک ہے۔

Jul 01, 2018 07:05 PM IST | Updated on: Jul 01, 2018 07:12 PM IST
سرجیکل اسٹرائیک پر ثبوت مانگنے والوں کی حب الوطنی مشکوک: بی جے پی ممبراسمبلی

بلیا: اپنے متنازعہ بیانات کو لے کر میڈیا کی سرخیوں میں رہنے والے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے ممبراسمبلی سریندر سنگھ نے ایک بار پھر سے متنازعہ بیان دیا ہے۔ اترپردیش کے بلیا ضلع کے بیریا سے بی جے پی ممبراسمبلی سریندر سنگھ نے اس بار سرجیکل اسٹرائیک کا ثبوت مانگنے والی اپوزیشن جماعتوں کے لیڈران پر سوال اٹھائے ہیں۔

سریندر سنگھ نے کہا کہ ہندوستانی فوج کے کسی بھی ایکشن کا اگر کوئی ثبوت مانگتا ہے تو ان کی حب الوطنی مشکوک ہے۔ وہ کہتے ہیں ’’اگر ایسے لوگوں کا ٹسٹ کرایا جائے تو میں دعوے کے ساتھ کہہ سکتا ہوں کہ ہندوستان میں ان کا جسم ضرور ہے، لیکن ہندوستان کے تئیں ان کے دل میں کوئی جگہ نہیں ہے۔

Loading...

ایسے لوگوں کا تو نارکو ٹسٹ ہونا چاہئے تاکہ پتہ چل سکے کہ ان کے جذبات پاکستانی ہیں یا اٹلی کے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس صدر راہل گاندھی اور سماجوادی پارٹی اور بی ایس پی کے لوگوں کے جذبات تو نصف ہندوستانی ہیں اور نصف غیر ملکی ہیں۔

سریندر سنگھ نے آگے کہا کہ راہل گاندھی سیاسی اندھے ہیں، ان کی سیاست کا ککہرا تک نہیں معلوم ہے۔ ان کے پاس کسی موضوع پر کچھ بھی بولنے کی صلاحیت نہیں ہے۔ وہیں بی ایس پی سربراہ مایاوتی امبیڈکر کی تصویر کو لے کر سیاست کرتی ہیں تو اکھلیش یادو ملائم کی تصویر لے کر سیاست کرتے ہیں۔

قابل ذکر ہے کہ ایسا پہلی بار نہیں جب بی جے پی کے ممبراسمبلی سریندر سنگھ نے پہلی بار کوئی ایسا بیان دیا ہو۔ وہ اس سے قبل بھی کئی بار متنازعہ بیان دے چکے ہیں۔

Loading...