برہموس جاسوسی معاملہ: فیس بک پردوپاکستانی خواتین کی فرضی پروفائل کے رابطے میں تھا نشانت اگروال

فیس بک پر"نیہا شرما" اور"پوجارنجن" نام سے چل رہے دو فرضی اکاونٹ کے ذریعے نشانت اگروال پاکستان کے مشکوک خفیہ ممبران سے رابطے میں تھا۔

Oct 10, 2018 09:05 AM IST | Updated on: Oct 10, 2018 09:13 AM IST
برہموس جاسوسی معاملہ: فیس بک پردوپاکستانی خواتین کی فرضی پروفائل کے رابطے میں تھا نشانت اگروال

نشانت اگروال کو نوجوان سائنسداں ایوارڈ بھی مل چکا ہے، یہ پاکستان کی دو خواتین کے فرضی پروفائل سے رابطے میں تھا۔

اترپردیش پولیس کا کہنا ہے کہ جاسوسی کے الزام میں گرفتاربرہموس یونٹ کے انجینئرنشانت اگروال فیس بک پر"نیہا شرما" اور"پوجارنجن" نام سے چل رہے دوفرضی اکاونٹ کے ذریعے پاکستان کے مشکوک خفیہ ممبران سے رابطے میں تھا۔

اترپردیش پولیس کے دہشت گردی مخالف دستے (اے ٹی ایس) نے منگل کوجونینئرمجسٹریٹ فرسٹ کلاس ایس ایم جوشی کی عدالت میں اگروال کو تفصیلی پوچھ گچھ کے لئے لکھنو لے جانے کے لئے اس کی ٹرانزٹ ریمانڈ کی مانگ کرتےہوئے یہ بات کہی۔

Loading...

مہاراشٹراے ٹی ایس کی طرف سے پیش ایڈیشنل پبلک پراسیکیوٹرایس  جے باگڑے نے کہا کہ عدالت نے یوپی اے ٹی ایس کے لئے تین دن کی ٹرانزٹ ریمانڈ منظورکی۔ اترپردیش اورمہاراشٹرپولیس کے اے ٹی ایس یونٹ نے مشترکہ کارروائی کرتے ہوئے پیرکواگروال کو برہموس کے وردھا روڈ کیندرسے پاکستان کو "تکنیکی اطلاعات"  مبینہ طورپرلیک کرنے کے الزام میں گرفتارکیا تھا۔

برہموس ایرواسپیس ہندوستان کے ڈیفنس ریسرچ اینڈ ڈیولیپمنٹ آرگنائزیشن (ڈی آرڈی او) اورروس کے "ملٹری انڈسٹریل کنسورٹیم" کا مشترکہ منصوبہ ہے۔ یوپی اے ٹی ایس کے جانچ افسر نے عدالت سے کہا کہ اگروال فیس بک پردوناموں "نہیا شرما" اور"پوجا رنجن" کے نام سے چلائے جارہے اکاونٹ سے رابطے میں تھا۔

اے ٹی ایس افسر نے کہا کہ یہ اکاونٹ اسلام آباد سے چلائے جارہے ہیں اورمانا جارہا ہے کہ انہیں پاکستان کے خفیہ ممبران ہینڈل کررہے ہیں۔ افسر نے عدالت کو بتایا کہ اس طرح کے فرضی اکاونٹ ہندوستان میں سینئرافسران سے رابطہ کرنے کے لئے مبینہ طورپراستعمال کئے جاتے ہیں۔

افسرنے کہا کہ "بہت حساس کام" میں لگے ہونے کے باوجود نشانت اگروال انٹرنیٹ پر"لاپرواہ" تھا اوراس نے خود کو ایک "آسان نشانہ" بنالیا۔ انہوں نے کہا کہ اگروال "لنکڈان" پر بھی سرگرم تھا۔ افسرنے کہا کہ ملزم کے ذاتی لیپ ٹاپ پربہت سی خفیہ اطلاعات موجود تھیں۔ انہوں نے کہا کہ ملزم کے ذاتی لیپ ٹاپ میں پی ڈی ایف فارمیٹ میں خصوصی فائلیں ملی ہیں۔

جانچ افسر نے کہا  کہ یہ سب اہم خفیہ اطلاعات ہیں، جنہیں اگرشیئرکیا جائے تو یہ ملک کے لئے خطرہ ہوسکتا ہے۔ ہم تفصیلی پوچھ گچھ کرکے انہیں لکھنو کی خصوصی عدالت میں پیش کرنا چاہتے ہیں اوراس لئے تین دن کے ٹرانزٹ ریمانڈ کی گزارش کی جاتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:    براہموس یونٹ میں کام کرنے والا مبینہ آئی ایس آئی ایجنٹ نشانت اگروال گرفتار، پاکستان کوفراہم کیں کئی اطلاعات

یہ بھی پڑھیں:    پاکستان کے لئے جاسوسی کر رہا 'ایجنٹ'، گرفتارفیس بک سے ہوئی تھی بھرتی

Loading...