الیکٹو سبجیکٹ کولے کر طلبہ میں عدم دلچسپی ، اردو کلاس کیلئے نہیں پہنچ رہا کوئی طالب علم

یو جی سی کے کا بی سی ایس پیٹرن کے تحت شروع کیا گیا الیکٹو سبجیکٹ نظام محض خانہ پری ثابت ہو رہا ہے ۔

Feb 07, 2018 11:23 PM IST | Updated on: Feb 07, 2018 11:23 PM IST
الیکٹو سبجیکٹ کولے کر طلبہ میں عدم دلچسپی ، اردو کلاس کیلئے نہیں پہنچ رہا کوئی طالب علم

چودھری چرن سنگھ یونیورسٹی میرٹھ ۔ فائل فوٹو

میرٹھ : یو جی سی کے کا بی سی ایس پیٹرن کے تحت شروع کیا گیا الیکٹو سبجیکٹ نظام محض خانہ پری ثابت ہو رہا ہے ۔' میرٹھ کی چودھری چرن سنگھ یونیورسٹی میں الیکٹو سبجیکٹ کے طور پر اردو کا انتخاب کرنے والے طلبہ کا بھی یہی حال ہے۔ کلاس کےاوقات کی وجہ سے کلاس کرنے میں دلچسپی نہ رکھنے والے زیادہ تر طلبہ شعبہ اردو کے لئے بھی سردرد ثابت ہو رہے ہیں ۔

زبان و ادب کے ساتھ ساتھ مختلف آرٹ اور ہنر کو فروغ دینے کے مقصد سے یو جی سی نے سی بی سی ایس پیٹرن کے تحت یونیورسٹی سلیبس میں الیکٹو سبجیکٹ کی شروعات کی ہے ۔ اس نظام کےتحت طالب علم کو ہرسمسٹر میں علیحدہ سے ایک الیکٹو سبجیکٹ کا انتخاب کرنا ضروری ہے ۔ میرٹھ یونیورسٹی میں مختلف شعبہ جات سے تعلق رکھنے والے کئی طلبہ نےالیکٹو سبجیکٹ کےطور پراردو کا انتخاب کیا تھا تاہم اس الیکٹو مضمون کے تئیں ان کا رویہ محض پاسنگ مارکس حاصل کرنےاور رسم ادائیگی بھر نظرآ رہا ہے ۔

الیکٹو سبجیکٹ کےطور پراردو کا انتخاب کرنے والےطلبہ کی نہ توکلاس کرنےمیں کوئی دلچسپی ہےاورنہ ہی کلاس کےنظام کوبہترکرنے میں یونیورسٹی انتظامیہ پر دباؤ بنانے کی ۔جانکاروں کے مطابق الیکٹو سبجیکٹ کےذریعہ زبان وادب کو فروغ دینےکی یو جی سی کی یہ کوششیں مثبت اورکارگرثابت ہو سکتی ہیں، لیکن اس کیلئے طلبہ میں دلچسپی اور رجحان پیدا کرنےکےساتھ ساتھ کلاس کےاوقات کےنظام کوبہترکرنےکی ضرورت ہے ۔

Loading...

Loading...