چنڈی گڑھ: نماز ادا کرنے سے جبراً روکنے پر6 لوگ گرفتار، ویڈیو کی بنیاد پر ہوئی کارروائی

مسلمانوں کو نماز جمعہ ادا کرنے سے روکنے کے معاملے میں گرو گرام پولیس نے 6 لوگوں کو گرفتار کیا ہے۔ وہ لوگ مبینہ طور پر "جے شری رام" کے نعرے لگا رہے تھے اور مسلمانوں سے کہہ رہے تھے کہ صرف مسجد میں نماز ادا کرو۔

Apr 26, 2018 08:35 PM IST | Updated on: Apr 26, 2018 08:38 PM IST
چنڈی گڑھ: نماز ادا کرنے سے جبراً روکنے پر6 لوگ گرفتار، ویڈیو کی بنیاد پر ہوئی کارروائی

چنڈی گڑھ:  مسلمانوں کو نماز جمعہ ادا کرنے سے روکنے کے معاملے میں گرو گرام پولیس نے 6 لوگوں کو گرفتار کیا ہے۔ وہ لوگ مبینہ  طور پر "جے شری رام"  کے نعرے لگا رہے تھے اور مسلمانوں سے کہہ رہے تھے کہ صرف مسجد میں نماز ادا کرو۔

اس حادثہ کا ویڈیو وائرل ہوگیا تھا، جس کے قریب ایک ہفتے بعد پولیس نے 6 لوگوں کو گرفتار کیا گیا ہے، ان کے نام ارون، منیش، موہت، رویندر اور مونو ہے۔ پولس کے مطابق حادثہ 20 اپریل کا ہے، لیکن 23 اپریل تک کوئی شکایت پولس میں درج نہیں کرائی گئی تھی۔

Loading...

پولس نے بتایا کہ کچھ لوگ گروگرام کے سیکٹر 52 کے وزیرآباد میں نماز ادا کررہے تھے، اسی وقت یہ 6 ملزم وہاں آئے۔ ویڈیومیں دیکھا جاسکتا ہے کہ یہ لوگ  "جے شری رام" اور  "بانکے بہاری کی جے"  کے نعرے لگارہے ہیں اور ان لوگوں سے علاقہ کو چھوڑنے کو کہہ رہے ہیں۔ انہیں میں سے ایک آدمی کہہ رہا ہے کہ کوئی یہاں نماز نہیں ادا کر ے گا، مسجد کس لئے بنائی گئی ہے؟ سارے گرفتار کئے گئے لوگ وزیرآباد کے ہیں۔

گروگرام پولس کے ترجمان نے بتایا کہ پولس میں شکایت نہرو یو تنظیم کے چیئرمین کی طرف سے درج کرائی گئی۔ شکایت کنندہ نے کہاکہ وہ کئی سالوں سے اس میدان میں نماز ادا کرتے رہے ہیں، لیکن شرپسند عناصر نے انہیں وہاں نماز ادا کرنے سے "جے شری رام"  کے نعرے لگارہے تھے اور دھمکی دی کہ یہاں نماز ادا کرنے کے نتیجے بہت برے ہوں گے۔ شکایت کنندہ کو اس بات کا خوف تھا کہ یہ لوگ اگلے جمعہ کو پھر سے واپس آسکتے ہیں اور نماز ادا کرنے میں خلل ڈال سکتے ہیں۔پولیس نے ویڈیو کی بنیاد پر گرفتاریاں کیں۔

 

Loading...