این ڈی ٹی وی کے مالک کے ٹھکانوں سی بی آئی کا چھاپہ میڈیاکی آزادی پر حملہ : کانگریس

کانگریس نے ایک پرائیویٹ ٹیلی ویژن چینل کےمالک کے ٹھکانوں پر مرکزی تفتیشی بیورو کے چھاپوں کو میڈیا کی آزادی پر حملہ قرار دیتے ہوئے آج اسکی سخت مذمت کی

Jun 05, 2017 09:40 PM IST | Updated on: Jun 05, 2017 09:40 PM IST
این ڈی ٹی وی کے مالک کے ٹھکانوں سی بی آئی کا چھاپہ میڈیاکی آزادی پر حملہ : کانگریس

file photo

نئی دہلی: کانگریس نے ایک پرائیویٹ ٹیلی ویژن چینل کےمالک کے ٹھکانوں پر مرکزی تفتیشی بیورو(سی بی آئی) کے چھاپوں کو میڈیا کی آزادی پر حملہ قرار دیتے ہوئے آج اسکی سخت مذمت کی اور کہا کہ حکومت کی کوشش اسکے خلاف بولنے والوںمیں خوف وہراس پیدا کرنا ہے ۔ کانگریس کے سینئر ترجمان اجے ماکن نے یہاں پارٹی کی معمول کی پریس بریفنگ میں صحافیوں سے کہا کہ سی بی آئی نے این ڈی ٹی وی کے شریک بانی اور شریک چیئرمین پرنے رائے کے ٹھکانوں پر چھاپے مارکر میڈیا کو ڈرانے اور اس میں خوف پیدا کرنے کا کام کیا ہے ۔ اس سے یہ پیغام دینے کی کوشش کی گئی ہے کہ اسکے خلاف بولنے والوں کو اسی طرح کے نتائج بھگتنے پڑیں گے ۔

انھوں نے الزام لگایا کہ بیف پر پابندی کے معاملہ میں بھارتیہ جنتاپارٹی کے ترجمان نے چینل کے ایک اینکر کے ساتھ دو دن پہلے جھگڑا کیا تھا اور اسکے دودن بعد حکومت نے چینل کو سبق سکھانےکے لئے سی بی آئی کا استعمال کیا۔ انھوں نے یہ بھی کہا کہ جب تک یہ چینل سرکار کے ہاتھوں کھیلتا رہا سب کچھ ٹھیک تھا لیکن جیسے ہی اس نے سوال اٹھائے اسے ڈرانے اور سبق سکھانے کی کارروائی شروع ہوگئی ۔

کانگریس ترجمان نے کہا کہ مرکز میں جب کانگریس کی حکومت تھی تو اسی چینل نے اسکے خلاف کئی معاملے اٹھائے تھے اور ترقی پسند حکومت کو بدنام کرنے کی کوشش کی تھی لیکن کانگریس حکومت نے اسکے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی ۔ انکا کہنا تھا کہ ایک بینک سے 48کروڑ روپئے لینے کے معاملہ میں حکومت انی ڈی ٹی وی کے خلاف کارروائی کررہی ہے لیکن ملک کے کئی بینکوں سے نوہزارکروڑ روپئے لیکر لندن فرار ہوئے شراب کاروباری وجے مالیہ کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی گئی اور حکومت نے اس کو ملک سے بھاگ جانے دیا ۔

Loading...

Loading...