اکھلیش کے آبائی گاؤں کے نزدیک 15 روپے کی خاطر دلت جوڑے کا قتل

واقعہ تھانہ كرا کے لكھني میہتی پوري میں پیش آیا ، جہاں دلت برادری سے تعلق رکھنے والا بھارت اشوک کی راشن کی دکان سے بسکٹ کا پیکٹ خریدنے پہنچا تھا۔

Jul 28, 2016 05:54 PM IST | Updated on: Jul 28, 2016 05:54 PM IST
اکھلیش کے آبائی گاؤں کے نزدیک 15 روپے کی خاطر دلت جوڑے کا قتل

مین پوری : اتر پردیش کے مین پوری ضلع میں جمعرات کو وزیر اعلی اکھلیش یادو کے آبائی گاؤں سیفئی کے قریب محض پندرہ روپے کو لے کر ایک دلت جوڑے کو دن دہاڑے دبنگوں نے کلہاڑی سے کاٹ کر موت کے گھاٹ اتار دیا۔

قتل کا ملزم اشوک مشرا گاؤں میں ہی ایک چھوٹی سی دکان چلاتا ہے۔ واقعہ تھانہ كرا کے لكھني میہتی پوري میں پیش آیا ، جہاں دلت برادری سے تعلق رکھنے والا بھارت اشوک کی راشن کی دکان سے بسکٹ کا پیکٹ خریدنے پہنچا تھا۔ اشوک کا بھارت پر پہلے سے ہی کچھ قرضا تھا ،جس کو لے کر دونوں کے درمیان نوک جھونک ہو گئی اور دیکھتے ہی دیکھتے طیش میں آکر اشوک نے بھارت پر کلہاڑی سے حملہ کر دیا۔ اپنے شوہر کو بچانے آئی ممتا کو بھی اشوک نے کاٹ ڈالا۔ دونوں کی موقع پر ہی موت ہو گئی۔

فی الحال معاملہ کی سنجیدگی کے پیش نظر ڈی ایم اور ایس پی سمیت کئی تھانوں کے پولیس اہلکار بھی موقع پر پہنچ گئے ہیں۔ واقعہ کے بعد سے علاقہ میں کشیدگی کا ماحول ہے۔ تاہم پولیس سخت کارروائی کی یقین دہانی کرارہی ہے۔

Loading...

Loading...